کابینہ نے ‎بجلی تقسیم کارکمپنیاں صوبوں کے سپردکرنےکا فیصلہ منسوخ کرنےکی منظوری دیدی

فوٹو: فائل
فوٹو: فائل

اسلام آباد: نگران وفاقی کابینہ نے ‎بجلی تقسیم کارکمپنیاں صوبوں کے سپردکرنےکا پرانا فیصلہ منسوخ کرنےکی منظوری دے دی۔

ذرائع کے مطابق بجلی تقسیم کارکمپنیوں کی نجکاری کے بجائے نجی شعبےکو لانگ ٹرم کنسیشن پر دینےکی منظوری دی گئی ہے، پہلے مرحلے میں حیدرآباد  اور گوجرانوالا الیکٹرک سپلائی نجی شعبےکو دینےکی منظوری دی گئی ہے، ‎لاہور اور ملتان الیکٹرک سپلائی کمپنی کو دو دوکمپنیوں میں تقسیم کرنے کی منظوری دی گئی ہے۔

ذرائع کا کہنا ہےکہ  ‎نجکاری کمیشن تقسیم کارکمپنیاں نجی شعبےکو  دینےکے لیے لیڈنگ کردار  ادا کرےگا۔

ذرائع کے مطابق حکومت پاکستان نے 17 ارب روپے سے افغانستان میں طورخم  سے جلال آباد شاہراہ بنانےکا فیصلہ کیا ہے، افغانستان میں شاہراہ تعمیر کرنےکے لیے پبلک سیکٹر ڈویلپمنٹ فنڈ سے رقم دینےکی منظوری  بھی دی گئی ہے۔

ذرائع کا کہنا ہےکہ  کابینہ نے وزارت منصوبہ بندی وترقی کی سمری پر فنڈز جاری کرنےکی منظوری دی گئی ہے۔

نگران وفاقی کابینہ نے اوجی ڈی سی ایل کے شئیرز فروخت کرنےکا فیصلہ منسوخ کردیا، نجکاری کمیشن کو اوجی ڈی سی ایل کے 3کروڑ 22 لاکھ شئیرز پیٹرولیم ڈویژن کو دینےکی منظوری دی گئی، اوجی ڈی سی ایل کے شئیرز کو  ساورن ویلتھ فنڈز میں شامل کردیا گیا۔‎

مزید خبریں :