دنیا
Time 28 فروری ، 2024

اسرائیل سے بات چیت کے ساتھ جنگ کیلئے بھی پوری طرح تیار ہیں: اسماعیل ہنیہ

فوٹو: فائل
فوٹو: فائل

فلسطینی مزاحمتی تنظیم حماس کے رہنما اسماعیل ہنیہ نےکہا ہےکہ  اسرائیل سے بات  چیت میں نرمی کے ساتھ جنگ کے لیے بھی  پوری  طرح تیار  ہیں۔

ایک بیان میں اسماعیل ہنیہ کا کہنا تھا کہ اسرائیل سے بات چیت میں نرمی صرف فلسطینیوں کی جانوں کی خاطر ہے، حماس فلسطینیوں کے دفاع کے لیے بھی پوری طرح تیار ہے۔

اسماعیل ہنیہ کا کہنا تھا کہ مسلم دنیا اور پڑوسی ممالک کی ذمہ داری ہےکہ وہ شمالی غزہ میں قحط کی اسرائیلی سازش روکیں۔

انہوں نے اپیل کی کہ مغربی کنارے، بیت المقدس کے فلسطینی یکم رمضان کو مسجد اقصیٰ کی طرف مارچ کریں۔

ان کا کہنا تھا کہ اسرائیل کی جانب سے مسجد اقصیٰ کا محاصرہ غزہ کے محاصرے کی طرح ناقابل قبول ہے، غزہ کی حمایت کرنے والی مزاحمتی قوتیں الاقصیٰ کے لیے بھی اپنی جنگ تیز کریں۔

دوسری جانب اسرائیلی فوج کی غزہ کے علاقے دیر البلح میں صبح سےگولہ باری جاری ہے، ناصر اسپتال پر شیلنگ کے باعث اسپتال کو ایندھن اور طبی سامان کی عدم دستیابی کا سامنا ہے۔

بمباری کے بعد قحط کے ذریعے فلسطینیوں کی نسل کشی کی اسرائیلی سازش پر اقوام متحدہ کےحکام کا کہنا ہےکہ 6 لاکھ فلسطینی قحط کے دہانے پر ہیں۔

30 ہزار سے زائد فلسطینیوں کو شہید کرنے کے بعد اسرائیلی فوج کا کہنا ہےکہ ہم غزہ کے لوگوں سے نہیں حماس سے لڑ رہے ہیں۔

مزید خبریں :