پاکستان
Time 03 اپریل ، 2024

لاہور ہائیکورٹ کے 4 ججز کے بعد چیف جسٹس کو بھی دھمکی آمیز خط موصول، پاؤڈر بھی بھیجا گیا

اس سے قبل لاہور ہائی کورٹ کے جج جسٹس شجاعت علی خان، جسٹس شاہد بلال حسن، جسٹس عابد عزیز شیخ اور جسٹس عالیہ نعیم کے نام پاؤڈر بھرے دھمکی آمیز خط بھیجے گئے تھے— فوٹو:فائل
اس سے قبل لاہور ہائی کورٹ کے جج جسٹس شجاعت علی خان، جسٹس شاہد بلال حسن، جسٹس عابد عزیز شیخ اور جسٹس عالیہ نعیم کے نام پاؤڈر بھرے دھمکی آمیز خط بھیجے گئے تھے— فوٹو:فائل

لاہور ہائیکورٹ کے چیف جسٹس ملک شہزاد احمد خان کو بھی دھمکی آمیز خط موصول ہوا ہے۔

اس سے قبل لاہور ہائی کورٹ کے جج جسٹس شجاعت علی خان، جسٹس شاہد بلال حسن، جسٹس عابد عزیز شیخ اور جسٹس عالیہ نعیم کے نام پاؤڈر بھرے دھمکی آمیز خط بھیجے گئے تھے۔

تاہم اب لاہور ہائیکورٹ کے چیف جسٹس ملک شہزاد احمد خان کو بھی دھمکی آمیز خط موصول ہوا ہے۔

رجسٹرار آفس کے مطابق خط میں پاؤڈر اور دھمکی آمیز تحریر موجود ہے۔

علاوہ ازیں چیف جسٹس پاکستان سمیت سپریم کورٹ کے 4 ججز کو خط بھیجے گئے تھے۔ ذرائع کے مطابق ایک خط چیف جسٹس پاکستان جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کو بھیجا گیا۔ جسٹس اطہر من اللہ، جسٹس جمال مندوخیل اور جسٹس امین الدین کو بھی خط ملے، چاروں خط یکم اپریل کو سپریم کورٹ میں موصول ہوئے۔

خطوط کو کاؤنٹر ٹیررازم ڈیپارٹمنٹ کے حوالے کر دیا گیا۔

لاہور ہائیکورٹ کے 4 ججز کے بعد چیف جسٹس کو بھی دھمکی آمیز خط موصول، پاؤڈر  بھی موجود

مزید خبریں :