Can't connect right now! retry

دنیا
20 اپریل ، 2015

گزشتہ برس دنیا میں ڈیڑھ سو کھرب ڈالر کا برقی فضلہ پیدا ہوا

گزشتہ برس دنیا میں ڈیڑھ سو کھرب ڈالر کا برقی فضلہ پیدا ہوا

نیویارک.......اقوام متحدہ کی رپورٹ کے مطابق دنیا بھر میں گزشتہ برس چار کروڑ ٹن برقی فضلہ پیدا ہوا جس کی مالیت ڈیڑھ سو کھرب ڈالربنتی ہے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ الیکٹرانک ویسٹ میں ہر سال 20لاکھ ٹن کا اضافہ ہو رہا ہے۔ اقوام متحدہ کا کہنا ہے کہ گزشتہ برس چار کروڑ ٹن الیکٹرانک فضلہ پیدا ہوا، جس کی مالیت ڈیڑھ سو کھرب امریکی ڈالر ہے، تاہم اس میں سے مجموعی طور پر صرف 15فیصد کو دوبارہ استعمال کے قابل بنایا گیا، برقی کوڑ کباڑ میں سرِ فہرست ملک میں سال2014 میں امریکا رہا، جہاں 7072 کلو برقی کباڑ اکھٹا ہوا، چین میں 6032 کلوگرام، جبکہ جاپان میں 2200کلو گرام برقی کوڑا اکھٹا ہوا ہے۔ ادارے کا کہنا ہے کہ برطانیہ میں ساڑھے 23کلو گرام فی کس نیدرلینڈز، سویڈن، فرانس، امریکا اور آسٹریا میں 22کلو گرام سے زیادہ فی کس برقی کباڑ اکھٹا ہوا۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ جو ممالک ماحولیات کے بارے میں فکرمند ہیں، وہی سب سے زیاد فی کس الکٹرانک کباڑ پیدا کرتے ہیں۔ ادارے کا کہنا ہے کہ الیکٹرانک کباڑ کی بازیابی اور ری سائیکلنگ سے پانچ کھرب ڈالر سے زیادہ دولت حاصل ہوسکتی تھی، کیونکہ ان میں سے 300ٹن سونا ملتا جو سن2013 میں پیدا کیے جانے والے مجموعی سونے کا11 فیصد ہوتا، اقوام متحدہ کا کہنا ہے کہ ہر سال اس برقی فضلے میں20 لاکھ ٹن کا اضافہ ہوریا ہے اور سن 2018 تک اس کی مقدار 50میگا ٹن تک پہنچ جائے گی۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM