Can't connect right now! retry

مقبوضہ کشمیر میں مودی حکومت کی جارحیت پر اداکارہ ارمیلا بھی بول پڑیں


بالی وڈ اداکارہ اور بھارتی رکن کانگریس ارمیلا مٹونڈکر مقبوضہ کشمیر میں مودی حکومت کی جارحیت پر برس پڑیں۔

مقبوضہ کشمیر میں مسلسل 26 روز سے لاک ڈاؤن کے باعث عوام گھروں میں محصور اور حریت قیادت قید ہے، جگہ جگہ بھارتی فورسز کے ناکوں کے باعث مریضوں کو ادویات اور اسپتال جانے کی بھی اجازت نہیں ہے۔ 

اس کے علاوہ بھارتی فورسز اپنے حقوق کے لیے آواز بلند کرنے والے نہتے کشمیریوں پر پیلٹ گنوں اور آنسو گیس کا بے دریغ استعمال بھی کررہی ہیں۔

مقبوضہ کشمیر میں مودی حکومت کے ہتھکنڈوں پر بھارتی اداکارہ اور رکن کانگریس ارمیلا مٹونڈکر نے شدید غم و غصے کا اظہار کیا ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق اداکارہ نے بتایا کہ ان کا کشمیر میں موجود ساس سسر سے کوئی رابطہ نہیں ہو رہا۔

اداکارہ کا کہنا تھا کہ 22 دن گرز چکے میرے شوہر کی اپنے والدین سے بات نہیں ہو سکی اور نہ ہی میری ان سے بات ہوسکی ہے۔

انہوں نے مقبوضہ کشمیر کی کشیدہ صورتحال پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ پتا نہیں کہ مقبوضہ کشمیرمیں میری ساس اور سُسر کے پاس دوائیاں ہیں یا نہیں، دونوں ہی بلڈ پریشر کےمریض ہیں۔


مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM