Can't connect right now! retry

پاکستان
22 نومبر ، 2019

پنجاب میں اسموگ خطرناک حد سے تجاوز، مصنوعی بارش کرانے کی تجویز

لاہور کے ہر شہری کی صحت کو اسموگ سے خطرہ لاحق ہو گیا ہے، ایمنسٹی انٹرنیشنل نے خبردار کردیا— فوٹو: فائل

لاہور، گوجرانوالہ، قصور، سیالکوٹ سمیت پنجاب کے کئی شہروں میں اسموگ خطرناک حد تجاوز کرگئی۔

لاہور، فیصل آباد اور گوجرانوالہ میں آج بھی اسکول بند رہے۔ بارش ہونے تک آلودہ دھند میں مسلسل اضافے کا خدشہ ہے۔

لاہور اور ملحقہ علاقوں میں فی الحال بارش کا کوئی امکان نہیں ہے، ماہرین نے اسموگ سے بچنے کیلئے مصنوعی بارش کرانے کی تجویز دی ہے۔

محکمہ ماحولیات پنجاب نے اسموگ کی بڑھتی ہوئی صورتحال کو خطرناک قرار دیتے ہوئے حکومت کو فوری طورپر مصنوعی بارش کرانے کی تجویز دی ہے۔

ڈی جی ماحولیات تنویر احمد وڑائچ کہتے ہیں کہ موحولیاتی آلودگی کا باعث بننے والے اینٹوں کے تمام بھٹے ایک ماہ کیلئے بند کرنے کا نوٹیفکیشن بھی جاری کردیا ہے۔

ادھر انسانی حقوق کی عالمی تنظیم ایمنسٹی انٹرنیشنل کا کہنا ہے کہ لاہور کے ہر شہری کی صحت کو اسموگ سے خطرہ لاحق ہو گیا ہے، طبی ماہرین نے اسموگ سے بچاؤ کیلئے شہریوں کو ماسک اور فوگ لائٹس کے استعمال کا مشورہ دیا ہے۔

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM