Can't connect right now! retry

دنیا
30 جنوری ، 2020

کورونا وائرس کا خدشہ، اٹلی نے 7 ہزار مسافروں پر مشتمل کروز شپ کو روک لیا

مسافروں میں سے کسی کو جہاز سے باہر آنے کی اجازت نہیں ہے جب کہ باہر سے بھی کوئی جہاز کے اندر نہیں گیا ہے،فوٹو: امریکی میڈیا

اٹلی جانے والے 7 ہزار مسافروں پر مشتمل کروز شپ (سیاحتی بحری جہاز) کو ایک  چینی خاتون مسافر کے کورونا وائرس سے متاثر ہونے کے خدشے کے پیش نظر  روک لیا گیا۔

اطالوی بحری جہاز کو  روم  سے 35 میل دور  چیویتا ویکیا کی بندرگاہ پر روکا گیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق چین سے تعلق رکھنے والی 54 سالہ خاتون مسافر کو ہلکا بخار اور سانس لینے میں دشواری ہوئی جس کی وجہ سے ان میں کورونا وائرس کا خدشہ ظاہر کیا جارہا ہے۔

چین کے شہر مکاؤ سے  تعلق رکھنے والی خاتون اور ان کے شوہر کو ڈاکٹروں کی نگہداشت میں علیحدہ کمرے میں رکھا گیا ہے اور ڈاکٹرز وائرس کی تشخیص کے لیے خاتون کے ٹیسٹ کر رہے ہیں۔

بحری جہاز میں 7 ہزار افراد  موجود ہیں جس میں 6 ہزار مسافر جبکہ ایک ہزار جہاز کا عملہ شامل ہے۔

مسافروں میں سے کسی کو  جہاز سے باہر آنے کی اجازت نہیں ہے جبکہ باہر سے بھی کوئی جہاز کے اندر نہیں گیا ہے۔

فوٹو:ٹوئٹر

رپورٹ کے مطابق بحری جہاز میں اس وقت  750 چینی سیاح موجود ہیں جن میں سے تقریباً 350 اٹلی کی بندرگاہ ساوونا سے سوار ہوئے تھے جب کہ خاتون اور اس کا شوہر بھی اسی جگہ سے جہاز میں سوار  ہوئے۔

خیال رہے کہ اس سے قبل  اٹلی میں کورونا وائرس کے خدشے کے پیش نظر متعدد افراد کو اسپتال داخل کیا گیا ہے تاہم کسی میں وائرس کی تصدیق نہیں ہوئی ہے۔

واضح رہے کہ کورونا وائرس کے اب تک دنیا کے 16 سے زائد ممالک میں کیسز رپورٹ ہوچکے ہیں، جب کہ صرف چین میں اس مہلک وائرس سے ہلاکتوں کی تعداد 170 ہوگئی ہے  اور متاثرہ افراد کی تعداد 7 ہزار 700 سے تجاوز کرچکی ہے۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM