Can't connect right now! retry

کھیل
11 مارچ ، 2020

ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر قلندرز کے دلبر حسین پر جرمانہ

لاہور قلندرز کے درمیان میچ میں سلو اوور ریٹ کے باعث پشاور زلمی پر بھی جرمانہ عائد کیا گیا — فوٹو: ٹوئٹر 

لاہور قلندرز کے بولر دلبر حسین پر ضابطہ اخلاق کی خلا ف ورزی پر میچ فیس کا 5 فیصد جرمانہ عائد کردیا گیا۔

پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) کے 10 مارچ کو لاہور قلندرز اور پشاور زلمی کے درمیان کھیلے گئے میچ میں دلبر حسین کو ضابطہ اخلاق کی شق 2.5 کی خلاف ورزی کرنے پر میچ فیس کا 5 فیصد جرمانہ عائد کیا گیا۔ 

ضابطہ اخلاق میں شامل یہ شق کھلاڑی کو آؤٹ کرنے کے بعد نامناسب زبان، اشارے یا ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے اسے اشتعال دلانے سے متعلق ہے۔

دلبر حسین نے پشاور زلمی کی اننگز کے دوران 18 ویں اوور میں حیدر علی کو آؤٹ کرنے کے بعد ایسے ردعمل کا اظہار کیا تھا جس سے کھلاڑی کو اشتعال آسکتا تھا۔

دوسری جانب لاہور قلندرز کیخلاف میچ  میں سلو اوور ریٹ کے باعث پشاور زلمی پر بھی جرمانہ عائد کیا گیا۔ پہلی بار خلاف ورزی پر پشاور زلمی کی پلیئنگ الیون میں شامل تمام کھلاڑیوں پر میچ فیس کا 10 فیصد جرمانہ عائد کیا گیا۔ 

سلو اوور ریٹ کے باعث پشاور زلمی کے خلاف کارروائی پی سی بی کے ضابطہ اخلاق برائے کھلاڑی اور سپورٹ اسٹاف کی شق 2.22کے تحت کی گئی۔

اگر پشاور زلمی کی ٹیم ایونٹ میں دوسری مرتبہ سلو اوور ریٹ کی مرتکب پائی گئی تو پلیئنگ الیون میں شامل تمام کھلاڑیوں پر میچ فیس کا 20 فیصد جرمانہ عائد کیا جائے گا۔

آن فیلڈ امپائرز علیم ڈار اور مائیکل گف، تھرڈ امپائر آصف یعقوب اور فورتھ امپائرناصر حسین نے دلبر حسین اور پشاور زلمی کی ٹیم پر چارجز عائد کیے جس پر میچ ریفری محمد انیس نے کارروائی کرتے ہوئے جرمانے کی سزائیں سنائیں۔

خیال رہے کہ لاہور قلندرز نے اس میچ میں پشاور زلمی کو دلچسپ مقابلے کے بعد 5 وکٹوں کی شکست دی تھی۔ یہ ٹورنامنٹ میں قلندرز کی مسلسل تیسری اور مجموعی طور پر چوتھی فتح تھی۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM