Can't connect right now! retry

دنیا
15 مارچ ، 2020

اٹلی میں کورونا وائرس سے مزید 368 افراد ہلاک ہوگئے

گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران اٹلی میں مزید ساڑھے 3 ہزار سے زائد کیسز سامنے آئے ہیں،فوٹو:فائل

اٹلی میں کورونا وائرس سے مزید 368 افراد ہلاک ہوگئے ہیں جس کے بعد یورپ کے سب سے زیادہ متاثرہ ملک میں کل ہلاکتوں کی تعداد ایک ہزار 809 ہوگئی ہے۔

چین کے بعد اٹلی میں کورونا وائرس نہایت تیزی سے پھیلتا جارہا ہے اور متاثرہ افراد کی تعداد میں مسلسل اضافہ ہوتا جارہا ہے۔

گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران اٹلی میں مزید ساڑھے 3 ہزار سے زائد کیسز سامنے آئے ہیں جس کے بعد اٹلی میں کل متاثرہ افراد کی تعداد ساڑھے 24 ہزار سے بھی تجاوز کرچکی ہے۔

اٹلی کا علاقہ لومبارڈے اور میلان وبا کا مرکز بنے ہوئے ہیں جہاں1500 کے قریب  افراد کورونا سے ہلاک ہوئے ہیں۔

 خطرناک کورونا وائرس کی وجہ سے حکومت نے اٹلی کے 14 صوبوں کی ڈیڑھ کروڑ سے زائد آبادی کو لاک ڈاؤن کر دیا ہے جس کے بعد اٹلی کی سڑکیں اور سیاحتی مقامات ویران پڑے ہیں۔

اسپین میں کورونا وائرس کے باعث لاک ڈاؤن

دوسری جانب اٹلی کے بعد اسپین میں بھی کورونا وائرس کے سب سے زیادہ کیسز سامنے آرہے ہیں۔

اسپین میں 96 نئی ہلاکتوں کے بعد کل ہلاکتوں کی تعداد 290 سے زائد ہوچکی ہے جب کہ وائرس سے متاثر ہونے والے افراد کی کل تعداد ساڑھے 7 ہزار سے تجاوز کرچکی ہے۔

کورونا وائرس کے کیسز میں اضافے کے بعد اسپین اٹلی کے بعد ملک میں لاک ڈاؤن کا اعلان کرنے والا یورپ کا دوسرا ملک بن گیا ہے۔

اسپین میں لاک ڈاون کا اطلاق آج پاکستانی وقت کے مطابق دوپہر 12 بجے سے شروع ہوا  ہے جو کہ آئندہ 15 روز تک جاری رہے گا۔

اسپین کے وزیراعظم نے عوام سے اپیل کی ہے کہ وہ ملازمت پر جانے یا سامان کی خریداری کے لیے گھروں سے نکلنے کے علاوہ باہر نہ نکلیں۔

پابندی کے باعث اسپین میں پھنسے سیاح اور طلبہ آبائی وطن لوٹنے کے لیے شدید مشکلات سے دوچار ہوگئے ہیں۔

اٹلی اور اسپین کے علاوہ یورپ کے دیگر ممالک میں بھی کورونا تیزی سے پھیل رہا ہے اور عالمی ادارہ صحت (W.H.O) نے یورپ کو وبا کا مرکز قرار دے دیا ہے۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM