Can't connect right now! retry

پاکستان
02 جولائی ، 2020

فیصل واوڈا نااہلی کیس کی جلد سماعت کی متفرق درخواست سماعت کیلئے مقرر

وفاقی وزیر کو دہری شہریت چھپانے پر نااہل قرار دینے کی پٹیشن کی گزشتہ سماعت 29 جنوری 2020 کو ہوئی، انہوں نے ابھی تک جواب جمع نہیں کرایا، درخواست گزار— فوٹو: فائل

اسلام آباد : وفاقی وزیر برائے آبی وسائل فیصل واوڈا کو گزشتہ عام انتخابات سے قبل کاغذات نامزدگی جمع کراتے ہوئے امریکی شہریت چھپانے پر نااہل قرار دینے کے کیس کو جلد سماعت کیلئے مقرر کرنے کی متفرق درخواست پر سماعت کل اسلام آباد ہائی کورٹ میں ہو گی۔

جسٹس عامر فاروق سماعت کریں گے۔ بیرسٹر جہانگیر جدون نے پٹیشنر میاں فیصل کی جانب سے اسلام آباد ہائی کورٹ میں متفرق درخواست جمع کرائی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ وفاقی وزیر فیصل واوڈا کو دہری شہریت چھپانے پر نااہل قرار دینے کی پٹیشن کی گزشتہ سماعت 29 جنوری 2020 کو ہوئی، انہوں نے ابھی تک جواب جمع نہیں کرایا اور غیر قانونی طور پر پبلک آفس سنبھال رکھا ہے۔

درخواست میں کہا گیا ہے کہ فریقین جان بوجھ کر معاملے کو طول دینا چاہتے ہیں، جنوری 2020 کے بعد سے کیس کو سماعت کے لیے مقرر نہیں کیا جا سکا۔ عوام کے بنیادی حقوق کے باعث کیس پر عدالت کی فوری توجہ کی ضرورت ہے، انصاف کے تقاضوں کو مدنظر رکھتے ہوئے درخواست جلد سماعت کے لیے مقرر کی جائے۔

درخواست گزار کے مطابق فیصل واوڈا نے 11 جون کو کاغذات نامزدگی جمع کرائے جنہیں ریٹرننگ افسر نے 18 جون کو منظور کیا جبکہ امریکی شہریت ترک کرنے کی درخواست 22 جون کو جمع کرائی گئی۔

درخواست کے مطابق  کاغذات نامزدگی جمع کراتے وقت فیصل واوڈا امریکی شہریت رکھتے تھے جسے انہوں نے جان بوجھ کر چھپایا۔

عدالت نے درخواست پر فیصل واوڈا اور الیکشن کمیشن سمیت فریقین کو نوٹسز جاری کر کے 29 جنوری سے جواب طلب کر رکھا ہے۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM