Can't connect right now! retry

پاکستان
10 اگست ، 2020

پائلٹس کو جعلی لائسنس جاری کرنیوالے افسران کیخلاف بھی کارروائی شروع کردی گئی

ایوی ایشن ڈویژن نے 31 اکتوبر تک لائسنس معطل رکھنے کے لیے بھی سمری کابینہ کو ارسال کردی ہے،فوٹو:فائل

ایوی ایشن ڈویژن نے پائلٹس کو جعلی اور مشکوک لائسنس جاری کرنے والے افسران کے خلاف بھی کارروائی شروع کر دی ہے۔

سول ایوی ایشن اتھارٹی کے افسران اور ملازمین کے خلاف فوجداری کارروائی شروع کرنے سے متعلق ایوی ایشن ڈویژن نے کیس وفاقی تحقیقاتی ایجسنی (ایف آئی اے) کو بھی ارسال کردیا ہے۔

دوسری جانب سول ایوی ایشن اتھارٹی نے 193 پائلٹوں کے لائسنس مزید 3 ماہ تک معطل رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔

خیال رہے کہ وفاقی کابینہ نے 7 جولائی کو ایک ماہ کے لیے جعلی اور مشکوک لائسنس معطل کرنے کی منظوری دی تھی۔

ایوی ایشن ڈویژن نے 31 اکتوبر تک لائسنس معطل رکھنے کے لیے سمری کابینہ کو ارسال کردی ہے، اب تک 28 پائلٹوں کے لائسنس جعلی ہونے کی بنیاد پر منسوخ کیے جاچکے ہیں۔

واضح رہے کہ جعلی لائسنس کا معاملہ سامنے آنے کے بعد امریکا ، برطانیہ اور یورپی یونین نے پی آئی کے کی پروازوں پر پابندی عائد کردی ہے جبکہ دیگر ممالک کی جانب سے بھی پاکستانی پائلٹس کے خلاف کارروائیاں کی گئی ہیں۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM