Can't connect right now! retry

دنیا
16 ستمبر ، 2020

ٹرمپ کی درخواست بھی مسترد، ایران نے ریسلر کو اچانک پھانسی دے دی

فوٹو: بشکریہ عرب میڈیا

تہران: ایران نے ملک میں حکومت مخالف مظاہروں میں شرکت کے الزام میں گرفتار ریسلر کو سزائے موت دے دی۔

عرب خبر رساں ادارے کے مطابق ایران نے چیمپئن ریسلر نوید افکاری کے معاملے پر عالمی دباؤ اور اپنے شہریوں کی جانب سے ریسلر کو معاف کرنے کی درخواست کو رد کرتے ہوئے نوید افکاری کو سزائے موت دے دی۔

ایران میں 2018 میں ہونے والے حکومت مخالف مظاہروں میں شرکت کے الزام میں 27 سالہ ریسلر نوید افکاری کو گرفتارکیا گیا تھا۔

گزشتہ دنوں امریکی صدر ٹرمپ نے ٹوئٹ کے ذریعے ایرانی حکام سے نوید افکاری کو پھانسی نہ دینے کی درخواست کی تھی۔

عرب میڈیا کا بتانا ہے کہ ایرانی حکومت نے ریسلر نوید افکاری کے اہلخانہ کو اطلاع دیے بغیر ہی انہیں پھانسی دی۔

عرب میڈیا کے مطابق نوید افکاری کی موت سے چند گھنٹے قبل ان کی جمعہ کے روز بھائی سے ٹیلی فونک گفتگو ہوئی جس کے بعد حکام نے ان کے اہلخانہ کے علم میں لائے بغیر ریسلر کو سزائے موت دے دی۔

ایرانی خبر رساں ادارے کی جانب سے سامنے لائی جانے والی مبینہ آڈیو ریکارڈنگ میں نوید افکاری اپنی سزائے موت رکنے کے حوالے سے پر امید تھے اور ان کا کہنا تھا کہ انہیں اور ان کے دو بھائیوں کو طویل قید کی سزا دی گئی ہے اور انہیں ہفتے کی صبح تہران کی جیل میں منتقل کیا جائے گا۔

ریکارڈنگ کے مطابق نوید افکاری نے کہا کہ وہ پرسکون ہیں اور امید ہے سب بہتر ہوجائے گا۔

عرب میڈیا کے مطابق نوید افکاری کی مبینہ آڈیو ریکارڈنگ سامنے آنے کے بعد سوشل میڈیا پر عوام نے شدید رد عمل کا اظہار کیا اور کہا کہ نوید افکاری کو حکام نے جعلی امید دے کر دھوکا دیا۔

برطانوی نشریاتی ادارے کا کہنا ہے کہ نوید افکاری کے اہلخانہ اور وکلا کو ریسلر کی پھانسی کی پیشگی اطلاع نہیں دی گئی جب کہ ایرانی قوانین کے تحت مجرم کو سزائے موت دینے سے 48 گھنٹے قبل اس کے اہلخانہ کو اطلاع کرنا لازمی ہے۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM