Can't connect right now! retry

پاکستان
24 اکتوبر ، 2020

نیب کی تاریخ کی سب سے بڑی 'پلی بارگین' کیلئے ملزم تیار ہوگیا

پی ایس او میں 23 ارب روپے کے کرپشن ریفرنس میں ملزم کامران افتخار لاری نے 1 ارب 29 لاکھ روپے سے زائد کی رقم واپس کرنے کی درخواست دی ہے— فوٹو: السٹریشن

قومی احتساب بیورو (نیب)کی تاریخ میں سب سے بڑی پِلی بارگین (رضاکارانہ رقم کی واپسی) ہونے جارہی ہے اور ملزم لوٹی ہوئی دولت واپس قومی خزانے میں جمع کرانے کے لیے تیار ہوگیا ہے۔

کراچی کی احتساب عدالت میں پاکستان اسٹیٹ آئل (پی ایس او) میں 23 ارب روپے کی کرپشن کے حوالے سے پی ایس او اور نجی آئل کمپنی بائیکو کے آفیشلز کے خلاف ریفرنس کی سماعت ہوئی، کامران افتخار لاری اور دیگر ملزمان عدالت میں پیش ہوئے۔

اس موقع پر نیب کی جانب سے عدالت کو بتایا گیا کہ ملزم کامران افتخار لاری نے پلی بارگین کی درخواست کی ہے اور وہ 1 ارب 29لاکھ روپے سے زائد کی رقم واپس کرنا چاہتاہے، ملزم مذکورہ رقم 3 اقساط میں ادا کرےگا۔

احتساب عدالت کو بتایا گیاکہ  ملزم نجی کمپنی بائیکو کا ملازم تھا جس نے پی ایس او کے ساتھ معاہدے میں دیگر ملزمان کے ساتھ ملی بھگت سے قومی خزانے کو 23 ارب سے زائد کا نقصان پہنچایا۔

عدالت کو بتایا گیا کہ چیئرمین نیب نے بھی ملزم کی پلی بارگین کی درخواست پر دستخط کردیے ہیں جس پر عدالت نے ریفرنس کے ایک ملزم کامران افتخار لاری کی جانب سے پلی بارگین کی درخواست منظور کرتے ہوئے ریفرنس کی مزید سماعت ملتوی کردی۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM