Can't connect right now! retry

کھیل
26 اکتوبر ، 2020

مسلم فٹبالر نے فرانس کی نمائندگی سے انکار کی خبروں کی تردید کردی

پال پوگبا نے خبر کو بے بنیاد قرار دیتے ہوئےکہا ہےکہ نہ تو میں نے ایسا کہا ہے اور نہ ہی سوچا ہے،فوٹو:فائل

مانچسٹر یونائیٹڈ کے عالمی شہرت یافتہ مسلم فٹبالر پال پوگبا نے فرانسیسی صدر ایمانویل میکرون کی جانب سے اسلام مخالف بیان پر فرانس کی نمائندگی سے انکار کی خبروں کی تردید کردی۔

پال پوگبا نے انسٹاگرام پر اپنی پوسٹ میں خبر کو بے بنیاد قرار دیتے ہوئےکہا ہےکہ نہ تو میں نے ایسا کہا ہے اور نہ ہی ایسا سوچا ہے۔

فٹبالر کا کہنا ہے کہ وہ اس بات پر سخت ناراض اور مایوس ہیں کہ کچھ میڈیا ادارے بے بنیاد سرخیوں کے لیے مجھے استعمال کرکے ایک انتہائی حساس موضوع میں فرانسیسی ٹیم کو گھسیٹ رہے ہیں۔

پوگبا کاکہنا ہے کہ وہ ہر قسم کے تشدد اور دہشت گردی کے خلاف ہیں، میڈیا کے کچھ نمائندے خبر بناتے وقت غیر ذمہ داری کا مظاہرہ کرتے ہوئے خبر کی تصدیق نہیں کرتے اور صحافتی آزادی کا غلط استعمال کرتے ہیں اور یہ بھی نہیں سوچتے کہ اس کا کسی کی زندگی پر کیا اثر ہوگا۔

فرانسیسی مسلم فٹبالر نے غلط خبر شائع کرنے اور اسے پھیلانے والوں کے خلاف قانونی کارروائی کا بھی اعلان کیا ہے۔

خیال رہے کہ برطانوی اخبار دی سن نے دعویٰ کیا تھا کہ پال پوگبا نے فرانسیسی صدر کی جانب سے اسلام مخالف بیان پر پوگبا نے فرانس کی نمائندگی سے انکار کر دیا ہے۔

ایک عرب ویب سائٹ پر شائع رپورٹ میں کہا گیاکہ پال پوگبا نے فرانس کی طرف سے نہ کھیلنےکافیصلہ صدر میکرون کی جانب سے طالب علموں کو گستاخانہ خاکے دکھانے پر ایک مسلمان شخص کے ہاتھوں قتل ہونے والے استاد کو فرانس کا سب سے بڑا اعزاز ملنے کے بعد کیا ہے۔

واضح رہے کہ 2013 میں انٹرنیشنل ڈیبیو کرنے والے پال پوگبا 2018 میں روس میں ہونے والے ورلڈکپ جیتنے والی فرانچ ٹیم کا بھی حصہ تھے ۔

انگلش فٹبال کلب مانچسٹر یونائیٹڈ نے پال پوگبا کو 2016 میں اطالوی کلب جووینٹس سے ریکارڈ 89.3 ملین یورو میں خریدا تھا جو کہ اس وقت تک کی سب سے مہنگی خریداری تھی۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM