Can't connect right now! retry

کھیل
11 اکتوبر ، 2021

پی سی بی اور پی ایس ایل فرنچائزز کے درمیان مالیاتی ماڈل پر معاملات طے پاگئے

پی ایس ایل فرنچائزز نے پی سی بی کی پیشکش قبول کرلی —فوٹو: انٹرنیٹ
پی ایس ایل فرنچائزز نے پی سی بی کی پیشکش قبول کرلی —فوٹو: انٹرنیٹ

پاکستان کرکٹ بورڈ ( پی سی بی) اور  پی ایس ایل فرنچائزز کے درمیان مالیاتی ماڈل پر معاملات طے پاگئے ہیں۔

 پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) فرنچائزز کو اب آمدن سے اضافی حصہ ملے گا تاہم گیارہویں ایڈیشن سے مالکانہ حقوق برقرار رکھنے کیلئے اضافی فیس دینا ہوگی۔

پاکستان کرکٹ بورڈ نے  پیر کو ایک اعلامیے میں کہا کہ پاکستان سپر لیگ کی تمام فرنچائزز نے گزشتہ ماہ گورننگ کونسل میں پیش کردہ پی سی بی کی پیشکش کو قبول کرلیا ہے۔

ذرائع کے مطابق، پاکستان کرکٹ بورڈ کی پیشکش کے بعد فرنچائززکو  اگلے ایڈیشن سے سینٹرل پول سے 85 کی بجائے 95 فیصد شیئر ملے گا، پانچویں اور چھٹے ایڈیشن میں کووڈ ریلیف کے طو ر پر اضافی 98،98 فیصد شیئر دیا جائے گا۔ 

تاہم گیارہویں ایڈیشن سے موجودہ فرنچائزز کو قیمت کے اوپر 25 فیصد اضافی فیس دینا ہوگی۔ 

پی ایس ایل فرنچائزز کی خواہش تھی کی اس شق کو ختم کیا جائے تاہم پی سی بی اپنے مؤقف پر قائم رہا۔

اس کے علاوہ ڈالر کا ریٹ فکس کرنے پر بھی اتفاق ہوگیا ہے یہ ریٹ آج کی تاریخ کے مطابق یعنی 171 روپے فی ڈالر پر فکسڈ ہوگا۔

پی سی بی کے جاری کردہ اعلامیے کے مطابق، چیئرمین پی سی بی رمیز راجہ کا کہنا ہے کہ بورڈ اور فرنچائزز کے درمیان حل طلب معاملات کی وجہ سے برانڈ متاثر ہورہا تھا، خوشی ہے کہ یہ معاملات اب حل ہوگئے۔

فرنچائز مالکان نے مشترکہ بیان میں کہا کہ وہ پی ایس ایل کو ایک بہترین برانڈ بنانے کیلئے پرعزم ہیں ،پی سی بی کی پیشکش کو قبول کرنا اس امر کی مزید تصدیق کرتا ہے۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM