صحت و سائنس
22 جنوری ، 2022

نجی اسپتالوں اور لیبارٹریز کی لوٹ مار، 400 کے کورونا ٹیسٹ کی 6 ہزار قیمت

کورونا وبا کے دوران ٹیسٹ کے نام پر نجی اسپتالوں اور لیبارٹریز کی لوٹ مار جاری ہے۔

ملک میں کورونا کی پانچویں لہر کے بعد ماسک اور سینیٹائزر سمیت وبا کے دوران مہنگی ہونے والی تقریباً ہر چیز کی قیمت اب مستحکم ہوگئی ہے لیکن کووڈ ٹیسٹ کے نام پر منافع خوری جاری ہے۔

نجی اسپتال اور لیبارٹریز نے منافع خوری کی انتہا کردی اور  کورونا ٹیسٹ پر اب اصل لاگت 400 رہ گئی ہے مگر  ٹیسٹ اب بھی ساڑھے 6 ہزار روپے کا کیا جارہا ہے۔

لاہور کی صرف 2 لیبارٹریز کورونا کے ٹیسٹ سے روزانہ ایک کروڑ روپے کما رہی ہیں جب کہ  سرکاری اسپتال اور حکومت یہ ٹیسٹ مفت کر رہی ہیں۔

نجی اسپتالوں اور لیبارٹریز کی اس لوٹ مار پر ملک بھر میں انتظامیہ ہاتھ پر ہاتھ دھرے بیٹھی ہے جب کہ کووڈ کا شکار مریض مافیا کے ہاتھوں لٹنے پر مجبور ہیں۔


مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM