پاکستان
12 اپریل ، 2022

شاہد خاقان نے حکومت اگست 2023ء تک چلانے کا عندیہ دے دیا

مسلم لیگ ن کے سینیئر رہنما شاہد خاقان عباسی نے حکومت اگست 2023ء تک چلانے کا عندیہ دے دیا۔—فوٹو: فائل
مسلم لیگ ن کے سینیئر رہنما شاہد خاقان عباسی نے حکومت اگست 2023ء تک چلانے کا عندیہ دے دیا۔—فوٹو: فائل

مسلم لیگ ن کے سینیئر رہنما شاہد خاقان عباسی نے حکومت اگست 2023ء تک چلانے کا عندیہ دے دیا۔

جیو نیوز کے پروگرام آج شاہ زیب خانزادہ میں گفتگو کرتے ہوئے مسلم لیگ ن کے سینیئر رہنما شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ ہم نے تحریک انصاف کو حکومت سے نکالا اور وہ اسمبلی ہی چھوڑ کر بھاگ گئے۔میں جلدی الیکشن کے حق میں تھا مگر اب میرا خیال ہے کہ اسمبلیاں اگست 2023 تک مدت پوری کرینگی۔

انہوں نے کہا کہ اب ہم بجٹ دینگے تو اُس پر عمل درآمد بھی کریں گے۔ اگر تحریک انصاف اپنی خالی نشتوں پر الیکشن نہیں لڑے گی تو کوئی اور لڑے گا۔

ان کا کہنا تھا وزارت  میری ترجیح نہیں جبکہ میں سمجھتا ہوں کہ  نیب کو ختم کر دینا چاہیے،  سنا ہے عارف علوی کے دانت میں درد ہوا ہے انہوں نے برش ٹھیک نہیں کیا تھا۔

شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ ہم انتقام نہیں لیں گے مگر پچھلی حکومت کی کرپشن لوگوں کے سامنے لائیں گے اور پھر قانون اپنا راستہ اپنائے گا۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان نے اپنے جھوٹے بیانیے کی بنیاد نیشنل سکیورٹی کمیٹی سے بنائی،وہیں سے اب اس کے حقائق آئینگے جہاں پورے ملک کی عسکری اور سویلین قیادت بیٹھےگی، ایسی گھٹیا حرکت دنیا میں نہیں دیکھی کہ ملک کا وزیراعظم عسکری قیادت کو ملوث کر کے اپنے سیاسی مقاصد کیلئے جھوٹ کا پلندہ تیار کرے۔

واضح رہے کہ قومی اسمبلی نے مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف کو نیا قائد ایوان منتخب کرلیا جس کے بعد شہباز شریف پاکستان کے 23 ویں وزیراعظم منتخب ہوگئے۔

خیال رہےکہ نئے قائد ایوان کے لیے متحدہ اپوزیشن کی جانب سے شہباز شریف اور تحریک انصاف کی جانب سے شاہ محمود قریشی وزیراعظم کے امیدوار تھے تاہم پی ٹی آئی کی جانب سے بائیکاٹ کے بعد شہباز شریف واحد امیدوار رہ گئے تھے۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM