دنیا
25 جون ، 2022

ایران جوہری پروگرام پر عالمی طاقتوں سے مذاکرات بحال کرنے کیلئے تیار

تہران میں ایرانی وزیر خارجہ امیر حسین عبد اللہیان کے ساتھ مشترکہ پریس کانفرنس میں جوزف بورل کا کہنا تھا کہ آنے والے دنوں میں تعطل ختم کر کے بات چیت دوبارہ شروع ہونے کی توقع ہے— فوٹو: رائٹرز
تہران میں ایرانی وزیر خارجہ امیر حسین عبد اللہیان کے ساتھ مشترکہ پریس کانفرنس میں جوزف بورل کا کہنا تھا کہ آنے والے دنوں میں تعطل ختم کر کے بات چیت دوبارہ شروع ہونے کی توقع ہے— فوٹو: رائٹرز

ایران اپنے جوہری پروگرام پر عالمی طاقتوں سے مذاکرات بحال کرنے کیلئے تیار ہوگیا۔

برطانوی خبر رساں ایجنسی رائٹرز کے مطابق یورپی یونین خارجہ پالیسی کے چیف جوزف بورل کا کہنا ہے کہ تعطل کا شکار ایران جوہری مذاکرات جلد دوبارہ شروع ہو جائیں گے۔

تہران میں ایرانی وزیر خارجہ امیر حسین عبد اللہیان کے ساتھ مشترکہ پریس کانفرنس میں جوزف بورل کا کہنا تھا کہ آنے والے دنوں میں تعطل ختم کر کے بات چیت دوبارہ شروع ہونے کی توقع ہے۔

جوزف بورل کا کہنا تھا کہ تین ماہ ہو چکے ہیں اب جوہری مذاکرات پر کام کو تیز کرنے کی ضرورت ہے، جوہری معاہدہ بحالی کیلئے ایران اور امریکا کے فیصلوں پر خوشی ہے۔

اس موقع پر ایرانی وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ جوہری معاہدہ بحال کرنے پر  بات چیت دوبارہ شروع کرنے کیلئے تیار ہیں، ایران کیلئے 2015 کے جوہری معاہدے کے اقتصادی فوائد کا مکمل حصول اہم ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ مسائل اور اختلافات کو مذاکرات کے ذریعے حل کرنے کی کوشش کریں گے۔

پریس کانفرنس کے دوران ایرانی وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ ایران اور یورپی یونین کے درمیان تعاون پر  یورپی یونین کے خارجہ پالیسی کے چیف جوزف بورل کے ساتھ طویل اور مثبت بات چیت ہوئی ہے۔

خیال رہے کہ ایران اور عالمی طاقتوں کے درمیان ویانا میں 11 ماہ تک مذاکرات جاری رہے تاہم امریکا کی جانب سے ایرانی پاسداران انقلاب کو دہشت گرد تنظیم قرار دیے جانے کے معاملے پر تعطل آگیا اور مارچ 2022 میں مذاکرات کا سلسلہ معطل ہوگیا۔ 

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM