دنیا
13 اگست ، 2022

ملعون سلمان رشدی پر حملہ کرنیوالے ملزم کی شناخت ظاہر کردی گئی

فوٹو: سوشل میڈیا
فوٹو: سوشل میڈیا

ملعون سلمان رشدی پرحملہ کرنیوالےملزم کی شناخت ظاہرکردی گئی۔

گزشتہ روز امریکا میں ملعون سلمان رشدی پر چاقو سے حملہ ہوا جس کے نتیجے میں وہ شدید زخمی ہوا۔

برطانوی اخبار ڈیلی میل کی رپورٹ کے مطابق شاتمِ رسول سلمان رشدی پر حملہ امریکی ریاست نیویارک کے علاقے شوٹاکوا میں اس وقت ہوا جب وہ ایک تقریب سے خطاب کیلئے اسٹیج پر پہنچا۔

جمعے کی صبح سی ایچ کیو 22 کے عنوان سے منعقدہ تقریب میں سلمان رشدی کو خطاب کرنا تھا اور جیسے ہی وہ اسٹیج پر آیا ایک شخص نے اس پر حملہ کردیا۔

رپورٹ کے مطابق حملہ آور نے اسٹیج پر آکر سلمان رشدی اور انٹرویو لینے والے ایک شخص پر چاقو سے حملہ کیا۔ بی بی سی کے مطابق سلمان رشدی کی گردن پر زخم آیا ہے۔

عینی شاہدین کے مطابق حملے کے فوری بعد سلمان رشدی کو وہاں سے لے جایا گیا جبکہ حملہ آور کو حراست میں لے لیا گیا۔

تاہم اب پولیس کی جانب سے  سلمان رشدی پرحملہ کرنیوالےملزم کی شناخت ظاہرکردی گئی ہے۔

نیویارک پولیس کے مطابق شاتمِ رسول سلمان رشدی پر 24 سالہ ہادی مطاری نامی شخص نے چاقو سے حملہ کیا،اس کا  تعلق امریکی ریاست نیوجرسی سے ہے۔اس نےکیلی فورنیا کے الزبتھ لرننگ سینٹر سے تعلیم حاصل کی۔

پولیس کا کہنا ہے کہ ہادی مطاری کی جانب سے حملے کی وجہ تاحال واضح نہیں ہوسکی۔

خیال رہے کہ ملعون سلمان رشدی کو توہین آمیز تصنیف کی وجہ سے ماضی میں بھی قتل کی دھمکیاں ملتی رہی ہیں اور 1988 میں اس معاملے پر برطانیہ میں بھی متعدد مظاہرے ہوئے تھے۔

پاکستان نے سلمان رشدی کی گستاخانہ کتاب پر پابندی عائد کردی تھی جبکہ ایران کے آیت اللہ خمینی نے 1989 میں رشدی کو واجب القتل قرار دینے کا فتویٰ دیا تھا۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM