دنیا
18 ستمبر ، 2022

سیلاب سے متاثرہ پاکستان کو دی گئی امداد قطرے سے زیادہ نہیں: امریکی سینیٹر

امریکا کی جانب سے ڈیزاسٹر پیکیج دیا جانا چاہیے اور آئی ایم ایف کی طرف سے بھی پاکستان کو مزید ریلیف ملنا چاہیے: امریکی سینیٹ کی خارجہ تعلقات کمیٹی کےچیئرمین باب میننڈیز/ فائل فوٹو
امریکا کی جانب سے ڈیزاسٹر پیکیج دیا جانا چاہیے اور آئی ایم ایف کی طرف سے بھی پاکستان کو مزید ریلیف ملنا چاہیے: امریکی سینیٹ کی خارجہ تعلقات کمیٹی کےچیئرمین باب میننڈیز/ فائل فوٹو

امریکی سینیٹ کی خارجہ تعلقات کمیٹی کےچیئرمین باب میننڈیز کا کہنا ہے کہ سیلاب سے متاثرہ پاکستان کو دی گئی امداد ایک قطرے سے زیادہ نہیں۔

نیوجرسی میں تقریب سےخطاب کرتے ہوئے سینیٹر باب میننڈیز  نے پاکستان میں سیلاب سے ہونے والی تباہی پر کہا کہ پاکستان کے لیے انٹرنیشنل ڈونرز کانفرنس کا انعقاد کیا جانا چاہیے اور امریکا کی جانب سے ڈیزاسٹرپیکیج دیا جانا چاہیے، اس کے ساتھ آئی ایم ایف کی طرف سے بھی پاکستان کو مزید ریلیف ملنا چاہیے۔

انہوں نے  کہا کہ یوکرین اور افغانستان کی طرح امریکا میں مقیم پاکستانیوں کو عارضی تحفظ کا درجہ دینے کا مطالبہ کرتے ہیں اور  وہ یہ معاملہ خود صدر جوبائیڈن کےسامنے رکھیں گے۔

اس کے علاوہ  پاکستان کا دورہ کرنے والی رکن کانگریس شیلا جیکسن نے بھی آنکھوں دیکھا حال امریکی ایوان نمائندگان کو بتایا اور کہا کہ پاکستان میں سیلابی پانی نکلنے میں 6 ماہ سے زیادہ کا عرصہ لگ سکتا ہے۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM