دنیا
24 نومبر ، 2022

انڈونیشیا زلزلہ: 2 دن تک ملبے تلے دبے رہنے والا 6 سالہ بچہ زندہ نکل آیا

فوٹو: انڈونیشیائی ریسکیو حکام
فوٹو: انڈونیشیائی ریسکیو حکام

'جسے اللہ رکھے اسے کون چکھے' یہ محاورہ تو آپ نے کئی بار سنا ہوگا لیکن اس کی حقیقی مثالیں بہت ہی کم دیکھنے کو ملتی ہیں۔

انڈونیشیا کے حالیہ تباہ کن زلزلے میں جہاں سیکڑوں افراد ہلاک اور زخمی ہوئے وہیں 48 گھنٹوں تک ایک گھر کے ملبے تلے دبے  رہنے والا 6 سالہ بچہ معجزانہ طورپر زندہ بچ گیا۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق انڈونیشیا کے صوبے مغربی جاوا میں زلزلے کے چار روز بعد بھی آفٹر شاکس کا سلسلہ جاری ہے،بارشوں اورلینڈ سلائیڈنگ کے باعث امدادی کاموں میں مشکلات کا سامنا ہے۔

اسی دوران 48 گھنٹوں تک ایک گھر کے ملبے تلے دبے رہنے والا 6 سالہ بچہ معجزانہ طورپر محفوظ رہا جسے ریسکیو حکام نے  باحفاظت باہر نکال لیا۔بچے کی شناخت ازکا مولانا ملک کے نام سے ہوئی ہے۔

رپورٹس کے مطابق 6 سالہ بچہ دو دن تک پانی اور خوراک کے بغیر ملبے کے نیچے معجزانہ طور پر زندہ رہا،جس کے بعد ریسکیواہلکاروں کی امیدیں بڑھی ہیں کہ ملبے تلے دبے افراد اب بھی زندہ ہوسکتے ہیں۔

فوٹو: انڈونیشیائی ریسکیو حکام
فوٹو: انڈونیشیائی ریسکیو حکام 

رپورٹس کے مطابق ازکا کی والدہ اور دادی کی لاشیں پہلے ہی نکالی جاچکی ہیں۔

مغربی جاوا میں جاری بارشیں اور لینڈ سلائیڈنگ نے پہاڑی علاقے میں امدادی سرگرمیوں کو مشکل بنادیا ہے،سب سے زیادہ متاثر سیانجر میں لینڈ سلائیڈنگ کی وجہ سے ایک گاؤں مکمل مٹی تلے دب گیا ہے۔

سیانجر کے دورہ کے موقع پر انڈونیشیا کے صدر کا کہنا تھا کہ حالات سخت ہیں،بارش ہو رہی ہے،آفٹر شاکس کا سلسلہ بھی جاری ہے،اس لیے احتیاط کی ضرورت ہے،اس وقت انخلا پہلی ترجیح ہے۔

واضح رہے کہ انڈونیشیا کے صوبے  مغربی جاوا میں پیر کو آنے والے 5.6 شدت کے زلزلے میں 271 افراد ہلاک اور سیکڑوں زخمی ہوئے ہیں۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM