دنیا
25 جنوری ، 2023

ملزم آفتاب نے شردھا کو قتل کرکے 35 ٹکڑے کیوں کیے؟ پولیس وجہ سامنے لے آئی

دہلی پولیس نے منگل کے روز آفتاب پونا والا کے خلاف 6,629 صفحات پر مشتمل چارج شیٹ عدالت میں پیش کی/ فائل فوٹو
دہلی پولیس نے منگل کے روز آفتاب پونا والا کے خلاف 6,629 صفحات پر مشتمل چارج شیٹ عدالت میں پیش کی/ فائل فوٹو

بھارت میں گزشتہ برس پیش آئے اندوہناک واقعے سے متعلق چند انکشافات سامنے آئے ہیں۔

دہلی پولیس نے منگل کے روز آفتاب پونے والا کے خلاف  چارج شیٹ عدالت میں پیش کی جس کے بعد آفتاب کے جوڈیشل ریمانڈ میں 7 فروری تک توسیع کردی گئی۔

چارج شیٹ میں پولیس کی جانب سے انکشاف کیا گیا کہ آفتاب نے شردھا کو دوست سے ملاقات کرنے کے باعث غصے میں قتل کیا، آفتاب کے علم میں جب آیا کہ شردھا اپنے دوست سے ملنے گئی ہے تو وہ آپے سے باہر ہوگیا۔

پولیس نے بتایا کہ آفتاب کے غصے کی وجہ یہ ہی تھی کہ شردھا جس سے ملنے گئی وہ آفتاب کو پسند نہیں تھا۔

پولیس کے مطابق شردھا اور آفتاب میں ان کی اینیورسری (جس روز وہ پہلی بار ملے تھے) یعنی 17 مئی کو کسی بات پر جھگڑا ہوا جس کے بعد شردھا ڈیٹنگ ایپ پر بنائے گئے  دوست کے گھر چلی گئی اور رات وہیں گزاری۔

اگلے روز جب شردھا لوٹی تو آفتاب نے پر تشدد رویہ اختیار کرتے ہوئے آری سے اس پر وار کرکے اس کے 35 ٹکڑے کردیے۔

خیال رہے کہ آفتاب پونا والا پر مئی میں اپنی دوست شردھا کو تلخ کلامی کے بعد قتل کرنے کا الزام ہے، جرم چھپانے کے لیے آفتاب نے لاش کے 35 ٹکڑے کر کے فریج میں رکھے اور ایک ایک کرکے 18 دنوں میں شہر کے مختلف مقامات پر پھینکے۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM