Time 25 مئی ، 2023
سائنس و ٹیکنالوجی

نماز سکھانے کیلئے جدید جائے نماز متعارف

جائے نماز میں ایک ایل ای ڈی اسکرین لگی ہوئی ہے اور ساتھ ہی اس میں بلٹ ان اسپیکر نصب ہے جو استعمال کرنے والوں کو مرحلہ وار تربیت دیتی ہے/ فوٹو بشکریہ خلیج ٹائمز
جائے نماز میں ایک ایل ای ڈی اسکرین لگی ہوئی ہے اور ساتھ ہی اس میں بلٹ ان اسپیکر نصب ہے جو استعمال کرنے والوں کو مرحلہ وار تربیت دیتی ہے/ فوٹو بشکریہ خلیج ٹائمز

ویسے تو ہم یا تو اپنے گھر کے بڑوں یا پھر مدرسے میں نماز سیکھتے ہیں لیکن اب بچوں اور دائرہ  اسلام میں داخل ہونے والے افراد کی سہولت کیلئے نماز سیکھنے کا طریقہ کچھ منفرد اور آسان انداز میں متعارف کروایا گیا ہے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق 'اسمارٹ پریئر رگ' نامی جائے نماز کی یہ ایجاد قطر سے تعلق رکھنے والے عبدالرحمان صالح خامس کی ہے جنہیں اس ایجاد پر   جینیوا میں ہونے والی ایجادات کی بین الاقوامی نمائش  میں گولڈ میڈل سے بھی نوازا جاچکا ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق عبدالرحمان  نے اس اسمارٹ پریئر رگ  کو سجدہ  کا نام دیا ہے  جس  کی ایجاد کا مقصد بچوں سمیت دائرہ اسلام میں آنے والے نئے مسلمانوں کو نماز کو صحیح طریقے سے ادا کرنے کا طریقہ سکھانا ہے۔

اسمارٹ پریئر  رگ  'سجدہ' کو استعمال کیسے کیا جاتا ہے؟ 

اسمارٹ پریئر  رگ 'سجدہ' کو استعمال کرنے کا  آسان طریقہ ہے جس میں جائے نماز میں ایک ایل ای ڈی اسکرین لگی ہوئی ہے اور ساتھ ہی اس میں بلٹ ان اسپیکر نصب ہے جو استعمال کرنے والوں کو مرحلہ وار تربیت دیتی ہے۔

فوٹو بشکریہ خلیج ٹائمز
فوٹو بشکریہ خلیج ٹائمز

بتایا گیا ہے کہ سجدہ کو موبائل ایپ کے ذریعے جوڑا جاتا ہے جس کی مدد سے استعمال کرنے والے نماز پڑھنے کی رہنمائی حاصل کرسکتے ہیں۔ 

سجدہ میں اور کون سے فیچرز ہیں؟

فوٹو بشکریہ خلیج ٹائمز
فوٹو بشکریہ خلیج ٹائمز
  • ’ سجدہ ‘ روزانہ پڑھی جانے والی نمازوں کو مرحلہ وار سکھانے میں مددگار ہے۔
  •  ’ سجدہ ‘ میں نصب ایل ای ڈی اسکرین قرآن پڑھنے اور حفظ کرنے میں بھی مدد گار ثابت ہوگی۔
  •  سجدہ  پر واضح ہونے والی قرآنی آیات عربی، انگریزی اور لاطینی زبان میں موجود ہوں گی جبکہ  مستقبل میں مزید زبانوں کو بھی شامل کیا جائے گا۔
  • اس کے علاوہ قرآنی آیات کے حرف کے سائز کو بھی چھوٹا یا بڑا کیا جاسکتا ہے۔