Can't connect right now! retry

کاروبار
12 فروری ، 2020

2019 کی پہلی ششماہی میں پی آئی اے کی آمدنی میں 44 فیصد اضافہ ہوا: رپورٹ

پی آئی اےکو 2018 میں کل 68 ارب کا خسارہ ہوا تھا جس سے قرضوں میں اضافہ ہوا،ترجمان ،فوٹو:فائل

پاکستان انٹرنیشنل ائیر لائنز (پی آئی اے) نے 2019کی پہلی ششماہی رپورٹ جاری کردی ہے جس کے مطابق جنوری تاجون  پی آئی اے کے ریونیو میں 44 فیصد اضافہ ہوا ہے۔

رپورٹ کے مطابق جنوری تاجون 2019 آپریشنل نقصان میں 40 فیصدکی کمی ہوئی ہے  اور 2019 کے پہلے6 مہینےمیں ریونیو 66 ارب روپے حاصل ہوا۔

ترجمان پی آئی اے کے مطابق 2018 کے پہلے 6 ماہ میں ریونیو 46 ارب روپے تھا اور  خسارہ 17 ارب روپے تھا جو کہ 2019 میں کم ہو کر 7 ارب روپے رہ گیا۔

پی آئی اے کو  2018 میں کل 68 ارب روپے کا خسارہ ہوا تھا جس سے قرضوں میں اضافہ ہوا۔

ترجمان پی آئی اے کا کہنا ہے کہ قومی ائیر لائنز نے تمام شعبوں میں نمایاں کارکردگی دکھائی ہے اور سیٹ فیکٹر میں 6 پوائنٹس کا اضافہ  کیا جوکہ 2019 کی پہلی ششماہی میں 84 فیصد رہا۔

پی آئی اے پر سے سیکیورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن آف پاکستان (ایس ای سی پی) کا ڈیفالٹ نوٹس بھی ختم ہوگیا ہے۔

ترجمان کے مطابق بہتر نتائج کی بنیادی وجہ انتظامیہ کی حکمت عملی اور نظم وضبط میں بہتری ہے جب کہ نئےمنافع بخش پروازوں کا اجراء اورغیر ضروری اخراجات میں کنٹرول بھی بہتری کی وجہ رہا۔

ترجمان پی آئی اے کا کہنا ہے کہ سال 2019 کے مکمل نتائج کا بھی جلد اعلان کردیا جائے گا۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM