Can't connect right now! retry

دنیا
26 اپریل ، 2020

ڈونلڈ ٹرمپ نے امریکی میڈیا کو جھوٹا قرار دیدیا

کورونا وائرس کے خاتمے کے لیے جراثیم کش ادویات کے استعمال سے متعلق بیان پر شدید تنقید کے بعد امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے امریکی میڈیا کو ہی جھوٹا قرار دے دیا۔

کورونا کے علاج کے لیے نامعقول تجویز دینے والے امریکا کے صدر ٹرمپ صحافیوں کے سخت سوالات سے ڈر گئے اور انھوں نے ہفتے کو  وائٹ ہاؤس میں ہونے والی پریس کانفرنس ہی منسوخ کر دی۔

امریکی صدر ٹرمپ نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر پریس کانفرنس منسوخ کرنے کا اعلان کیا۔

 صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا کہ وائٹ ہاؤس میں ایسی نیوز کانفرنس کرنے کا کیا فائدہ جب ملکی میڈیا صرف جارحانہ سوالات پوچھتا ہو اور حقائق کو درست انداز سے پیش نہ کرے۔ 

ٹرمپ نے دعویٰ کیا کہ ان کی پریس کانفرنسز دکھا کر  میڈیا ریٹنگ تو حاصل کر لیتا ہے مگر ان کی جھوٹی خبریں دینے کے سبب عوام کو کچھ نہیں ملتا۔ 

خیال رہے کہ سائنس سے ناواقف صدر ٹرمپ نے دو روز  پہلے پریس بریفنگ میں کہا تھا کہ انہوں نے ڈاکٹروں کو تجویز پیش کی ہے کہ کورونا مریضوں کے علاج کے لیے ان کے جسم میں الٹراوائلٹ شعاعیں داخل کرنے اور جراثیم کش محلول کے انجیکشن لگانے کے تجربات کیے جائیں۔ 

اس خلاف عقل تجویز  پر دنیا بھر کے سائنس دانوں نے امریکی صدر کا تمسخر اڑایا تھا، اور نوبت یہ آئی تھی کہ صدر ٹرمپ کو جمعہ کی شب پریس بریفنگ میں سوالات سے گریز کرتے ہوئے کمرہ چھوڑنا پڑا تھا۔

وائٹ ہاؤس کا خیال ہے کہ پریس بریفنگ میں صدر ٹرمپ کی موجودگی فائدے سے زیادہ ان کے لیے نقصان کا باعث بن رہی تھی کیونکہ ان کی مقبولیت کا گراف تیزی سے گر رہا تھا۔

واضح رہے کہ اس سے قبل ڈونلڈ ٹرمپ نے کورونا وائرس کے علاج کے لیے ملیریا کی دوا جب کہ وائرس سے بچنے کے لیے ماسک کی جگہ اسکارف پہننےکی بھی تجویز دی تھی۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM