پاکستان
28 جون ، 2022

چیئرمین پی ٹی آئی نے معیشت ٹھیک کرنے کا فارمولا بتا دیا

عمران خان نے اپنے ویڈیو خطاب میں یہ بھی کہا کہ انہیں لگ رہا ہے کہ پنجاب میں اب حمزہ شہباز کی حکومت نہیں رہے گی— فوٹو: فائل
عمران خان نے اپنے ویڈیو خطاب میں یہ بھی کہا کہ انہیں لگ رہا ہے کہ پنجاب میں اب حمزہ شہباز کی حکومت نہیں رہے گی— فوٹو: فائل

چیئرمین پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) عمران خان نے اپنے ویڈیو خطاب میں کہا ہے کہ انہیں لگ رہا ہے کہ پنجاب میں اب حمزہ شہباز کی حکومت نہیں رہے گی، عدالت نے مخصوص نشستوں پر انہیں بے نقاب کردیا ہے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ پنجاب کے ضمنی انتخابات میں دھاندلی کی کوششیں جاری ہیں، یہاں سیاستدانوں کو بھیڑ  بکریوں کی طرح خریدا جاتا ہے۔

موجودہ حکومت پر تنقید کرتے ہوئے چیئرمین پی ٹی آئی کا کہنا تھا کہ اس حکومت سے نہ معیشت سنبھالی جارہی ہے اور نہ ہی قیمتوں پر ان کا کوئی کنٹرول ہے، ملک کو بحران سے نکالنے کی ان کی نیت اور صلاحیت ہی نہیں تھی۔

انہوں نے کہا کہ ہمیں  روس سے تیل لینا تھا لیکن انہوں نے سازش کی اور عدم استحکام پیدا کیا۔  اب حکومت کو بتانا ہوگا کہ سازش کرکے بحران کیوں پیدا کیا گیا۔

سابق وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ کورونا کے باوجود پاکستان سب سے سستا ملک تھا، ہم پر بھی دباؤ تھا لیکن ہم نےقیمتیں نہیں بڑھائیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ہمارے دور حکومت میں لوڈ شیڈنگ نہیں تھی اب کیسے ہوگئی ہے۔ بجلی کےمنصوبوں پر ن لیگ نے معاہدے کیے تھے پھر بھی ہم نے بجلی کی قیمت نہیں بڑھنے دی۔

پی ٹی آئی سربراہ نے کہا کہ ن لیگ کی حکومت نے درآمدی ایندھن پر پاور  پلانٹس لگائے تھے، اب بجلی بھی نہیں بن رہی اور ہم کیپیسٹی چارجز کی مد میں پیسے بھی دے رہے ہیں۔

عمران خان نے کہا کہ حکومت اور جمہوریت اخلاقی قوت سے چلتی ہے ڈنڈے  سے نہیں لیکن ان کا خیال ہے کہ وہ صرف ظلم اور تشدد کرکے لوگوں کوکنٹرول کرلیں گے۔

چیئرمین پی ٹی آئی نے اپنے خطاب میں ملک کو درپیش معاشی  مسائل سے نکالنے کا  حل بتاتے ہوئے کہا کہ ملکی معیشت کو ٹھیک کرنے کا ایک ہی طریقہ ہے اور  وہ یہ کہ زرداری اور شریف خاندان باہر  پڑا ہوا اپنا آدھا پیسہ ملک میں واپس لے آئیں۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM