پاکستان
05 جولائی ، 2022

گیس کی سپلائی بند ہونے سے پنجاب کی400 کےقریب ٹیکسٹائل ملز کا پہیہ جام

پنجاب میں گیس اور بجلی نہ ملنے پر 400 کے قریب ٹیکسٹائل ملز بند ہو گئی ہیں۔—فوٹو:فائل
پنجاب میں گیس اور بجلی نہ ملنے پر 400 کے قریب ٹیکسٹائل ملز بند ہو گئی ہیں۔—فوٹو:فائل

 پنجاب میں گیس  اور بجلی نہ ملنے پر 400 کے قریب ٹیکسٹائل ملز بند ہو گئی ہیں۔

 پنجاب میں گیس بحران شدت اختیارکر گیا، چوتھے روز بھی پنجاب کی ٹیکسٹائل ملز کو گیس کی سپلائی بند ہے،گیس نہ ملنے پر 400 کے قریب ٹیکسٹائل ملز کی بندش سے ایک ارب ڈالر کی برآمدات کم ہوں گی۔

آل پاکستان ٹیکسٹائل ملز ایسو سی ایشن(اپٹما)  نے وزیراعظم شہباز شریف کو خط لکھ کر ٹیکسٹائل برآمدات میں ممکنہ کمی سے آگاہ کردیا۔

اپٹما کے  ذرائع کے مطابق گیس اور بجلی نہ ملنے پر 400 کے قریب ٹیکسٹائل ملز بند ہو گئی ہیں، ٹیکسٹائل ملز کو برآمدی آرڈر پورے کرنے میں دشواری کا سامنا ہے جبکہ ٹیکسٹائل ملز کی بندش سے ہزاروں ڈیلی ویجز ملازمین فارغ ہو گئے ہیں۔

فیکٹری  مالکان کا کہنا ہے کہ مہنگے ڈیزل سے ٹیکسٹائل ملز چلانا ممکن نہیں، اپٹما کے پیٹرن ان چیف گوہر اعجاز نے کہا ہے کہ گیس کی بندش سے ایک ارب ڈالرز کا  زرِمبادلہ ضائع ہو جائے گا،وزیراعظم شہبازشریف فوری نوٹس لیں اورگیس بحال کی جائے۔

دوسری جانب وزیر اعظم شہباز شریف نے کہا ہے کہ انڈسٹریل بالخصوص ٹیکسٹائل سیکٹر کے انرجی سپلائی مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کریں گے،انڈسٹریل،برآمدی سیکٹر کے مسائل کے فوری حل میں پاکستان کی معاشی بقا پوشیدہ ہے۔

سرمایہ کاری کے فروغ سے متعلق اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ  ان سیکٹرز کی مدد سے مصنوعات کو عالمی مارکیٹ میں بہتر طور پر پیش کیا جاسکتا ہے۔

وزیراعظم  نے صرف گیس پر چلنے والے کارخانوں کیلئے گیس لوڈشیڈنگ پالیسی پر نظرثانی کی ہدایت بھی کی۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM