دنیا
15 اگست ، 2022

ملعون سلمان رشدی پر حملےکے معاملے پر ایران کا ردعمل سامنے آگیا

فوٹو: فائل
فوٹو: فائل

امریکا میں ملعون سلمان رشدی پر  ہونے والے حملے سے متعلق  ایران کا ردعمل سامنے آگیا ہے۔

غیر ملکی خبر ایجنسی کے مطابق ترجمان ایرانی وزارت خارجہ نے ایک بیان میں کہا ہےکہ ملعون سلمان رشدی پر حملے سے کسی بھی قسم کے تعلق کی تردید کرتے ہیں، کسی کو بھی اسلامی جمہوریہ ایران پر الزام عائد کرنےکا حق نہیں ہے۔

 ترجمان ایرانی وزارت خارجہ کا کہنا تھا کہ ملعون سلمان رشدی نے آسمانی مذاہب کی توہین کرکے لوگوں کے غیض وغضب کو خود دعوت دی۔

ترجمان کا یہ بھی کہنا تھا کہ اس حملے میں سلمان رشدی  اور اس کے حامیوں کے علاوہ کسی اور کو قصور وار اور مذمت کے لائق نہیں سمجھتے۔

خیال رہے کہ ملعون سلمان رشدی پر گزشتہ ہفتے نیویارک میں ایک تقریب کےدوران چاقو سے حملہ کیا گیا تھا۔

پولیس نے ملعون سلمان رشدی پر حملےکےالزام میں 24سالہ شخص کو گرفتار کرلیا ہے جس کی شناخت ہادی مطر کے نام سے ہوئی ہے۔

خیال رہےکہ ملعون سلمان رشدی کو توہین آمیز تصنیف کی وجہ سے ماضی میں بھی قتل کی دھمکیاں ملتی رہی ہیں اور 1988 میں اس معاملے پر برطانیہ سمیت دنیا بھر میں مظاہرے ہوئے تھے۔

پاکستان نے سلمان رشدی کی گستاخانہ کتاب پر پابندی عائد کردی تھی جب کہ ایران کے آیت اللہ خمینی نے 1989 میں رشدی کو واجب القتل قرار دینےکا فتویٰ دیا تھا۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM