Can't connect right now! retry

کھیل
06 فروری ، 2020

سرفراز احمد کو ون ڈے کی قیادت سے سبکدوش کرنے کی بھی تیاری

ٹیسٹ اور ٹی ٹوئنٹی ٹیم کی کپتانی سے ہٹانے کے بعد سرفراز احمد کو ون ڈے کی قیادت سے سبکدوش کرنے کی بھی تیاری کی جارہی ہے جبکہ فوری طور پر ان کی ٹیم میں بطور کھلاڑی بھی واپسی مشکل دکھائی دے رہی ہے۔

سرفراز احمد کو ون ڈے کپتانی سے ہٹانا اس لیے حیران کن ہے کہ ان کی کپتانی میں پاکستان پچھلے چھ ون ڈے انٹرنیشنل جیت چکا ہے۔

ان میں ورلڈ کپ میں نیوزی لینڈ، افغانستان، جنوبی افریقا اور بنگلہ دیش کے بعد ہوم گراؤنڈ پر سری لنکا کے خلاف ہونے والے دو میچز بھی شامل ہیں۔

لیکن اس کے باوجود ذرائع کے مطابق ون ڈے فارمیٹ کے لیے بھی کپتانی کا تاج بابراعظم کے سر پر سجانے کی تیاری ہورہی ہے۔

تین اپریل کو پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) کے بعد پاکستان ٹیم نیشنل اسٹیڈیم کراچی میں بنگلا دیش کے خلاف واحد ون ڈے انٹر نیشنل میچ کھیلے گی۔

سرفراز احمد نے 2017 سے 2019 تک پاکستان کے لیے 35 ون ڈے انٹریشنل میں کپتانی کی۔ 21 جیتے اور 13 میں پاکستان کو شکست ہوئی۔

سرفراز احمد کی کپتانی میں پاکستانی ٹیم 2017 میں آئی سی سی چیمپئنز ٹرافی جیت چکی ہے۔

32 سالہ سرفراز احمد 116 ون ڈے انٹر نیشنل میں 2302 رنز 33 کی بیٹنگ اوسط سے بناچکے ہیں جبکہ وکٹوں کے پیچھے انہوں نے 116 کیچ اور 24 اسٹمپڈ کیے۔

یاد رہے کہ 18 اکتوبر 2019 کو پاکستان کرکٹ بورڈ نے اظہر علی کو قومی ٹیسٹ کا کپتان مقرر کر دیا تھا جب کہ قومی ٹی ٹوئنٹی ٹیم کی کپتانی بابراعظم کے سپرد کر دی تھی۔

سری لنکا کی ناتجربہ کار ٹیم کے ہاتھوں اذیت ناک شکست کے بعد سرفراز احمد کے ستارے گردش میں آئے او انہیں ایک ساتھ تینوں فارمیٹس سے ڈراپ کردیا گیا۔

پی سی بی کی جانب سے قومی ون ڈے ٹیم کے کپتان کا اعلان نہیں کیا گیا تھا اور کہا گیا تھا کہ ون ڈے کپتان کا فیصلہ ہالینڈ کے خلاف ایک روزہ سیریز سے قبل کیا جائے گا۔ پاکستان اور نیدرلینڈ کے درمیان ایک روزہ میچوں کی سیریز 4 سے 9 جولائی 2020 تک کھیلی جائے گی۔

تاہم اب امکان ہے کہ بنگلادیش کیخلاف واحد ون ڈے میچ کیلئے ٹیم کا اعلان نئے کپتان کے ساتھ کیا جائے گا۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM