Election 2024 Election 2024

پاکستان
Time 20 جنوری ، 2023

کراچی و حیدرآباد کے بلدیاتی انتخابات کالعدم قرار دیکر نیا الیکشن کرایا جائے، ایم کیو ایم

ایم کیوایم نے بائیکاٹ کیا تو ٹرن آؤٹ کم رہا، ووٹنگ کی شرح بڑھانے کیلئے دھاندلی کی جارہی ہے: وسیم اختر— فوٹو: فائل
 ایم کیوایم نے بائیکاٹ کیا تو ٹرن آؤٹ کم رہا، ووٹنگ کی شرح بڑھانے کیلئے دھاندلی کی جارہی ہے: وسیم اختر— فوٹو: فائل 

متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) پاکستان نے کراچی اور حیدرآباد میں نئے بلدیاتی انتخابات کرانے کا مطالبہ کردیا۔

کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وسیم اختر کا کہنا تھاکہ بلدیاتی انتخابات ہوئے پانچ دن ہوگئے لیکن نتیجہ اب تک نہیں آيا، موسم خراب ہے نہ برفباری، نہ ٹرن آؤٹ زیادہ ہےتوپھرانتخابی نتائج میں تاخیر کیوں؟ فافن اور الیکشن کمیشن سمیت سب کہہ رہے ہیں کہ انتحابات میں دھاندلی ہوئی۔

انہوں نے کہا کہ کراچی اور حیدر آباد کا بلدیاتی الیکشن کالعدم قرار دے کر نیا الیکشن کرایا جائے، وہ شہر جو اسلام آباد اورسندھ حکومت کابجٹ بناتاہے اس کاخیال کیاجائے، اگر بلدیاتی انتخابات میں ایسی دھاندلی ہوگی تو عام انتخابات میں کیاہوگا؟

ان کا کہنا تھاکہ کراچی میں تین بار بلدیاتی انتخابات ملتوی ہوئے پھر بھی حلقہ بندیاں ٹھیک نہ کی گئيں، الیکشن سےپہلے ہی نہیں بعد میں بھی دھاندلی کی جارہی ہے، ووٹنگ ٹرن آؤٹ بڑھانے کیلئے مختلف طریقے اپنائے جارہے ہیں۔

ایم کیو ایم رہنما کا کہنا تھاکہ ایم کیوایم نے بائیکاٹ کیا تو ٹرن آؤٹ کم رہا، 2015 کے بلدیاتی انتخابات سے موازنہ کریں تو حالیہ الیکشن میں بہت کم ووٹ کاسٹ ہوئے، ووٹنگ کی شرح بڑھانے کیلئے دھاندلی کی جارہی ہے، الیکشن کمیشن آنکھوں میں دھول جھونکنے میں بھی ناکام ہوچکی۔

ایم کیو ایم رہنما کا کہنا تھاکہ جماعت اسلامی، پی ٹی آئی، پیپلزپارٹی کوسمجھ نہیں آرہاکہ کیا کریں۔

خیال رہے کہ 15 جنوری کو کراچی اور حیدرآباد میں بلدیاتی انتخابات میں ایم کیو ایم نے بائیکاٹ کیا تھا اور دونوں ڈویژن میں پیپلزپارٹی کو برتری حاصل ہے۔

مزید خبریں :