Can't connect right now! retry

سائنس و ٹیکنالوجی
14 اپریل ، 2019

پروں کے اعتبار سے دنیا کے سب سے بڑے جہاز کی کامیاب پرواز

دیوقامت جہاز میں دو فیول ٹینک، چھ 747 جیٹ انجن، 28 ٹائر ہیں اور جہاز کے پروں کے دونوں سروں کے درمیان 385 فیٹ کا فاصلہ ہے۔ فوٹو: بشکریہ اسٹراٹو لانچ

حجم اور لمبائی کے بجائے طویل ترین پروں کے اعتبار سے دنیا کے سب سے بڑے جہاز نے اپنی پہلی پرواز کامیابی سے مکمل کر لی۔

سافٹ وئیر کمپنی مائیکرو سافٹ کے شریک بانی پال ایلن کی 2011 میں قائم کی گئی اسٹراٹو لانچ نامی کمپنی کے تیار کردہ جہاز نے ریاست کیلیفورنیا کے صحرا میں لانچنگ پیڈ پر کامیابی سے لینڈنگ کی۔

کمپنی کے مطابق طیارے نے کیلیفورنیا کے موجیو صحرا پر ڈھائی گھنٹے تک پرواز کی اور 189 میل فی گھنٹہ کی رفتار سے سفر کیا۔








دیوقامت جہاز میں دو فیول ٹینک، چھ 747 جیٹ انجن، 28 ٹائر ہیں اور جہاز کے پروں کے دونوں سروں کے درمیان 385 فیٹ کا فاصلہ ہے جو فٹبال گراؤنڈ کے رقبے سے زیادہ ہے۔

جہاز کے بارے میں بتایا جاتا ہے کہ اس سے سیٹلائٹس کے لیے لانچنگ پیڈ کا کام لیا جائے گا اور اس کے ذریعے سیٹلائٹ کو خلا میں روانہ کیا جائے گا۔

فوٹو: بشکریہ اسٹراٹو لانچ
فوٹو: بشکریہ ڈیجیٹل گلوب


Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM