Can't connect right now! retry

کاروبار
03 ستمبر ، 2019

روپے کی قدر میں کمی سے قرضوں میں 4 ہزار 270 ارب روپے کا اضافہ

مالی سال 2018-2019 میں قرضوں اور ادائیگیوں کی مد میں 10 ہزار 330 ارب روپے اضافہ ہوا: اعلامیہ وزرات خزانہ  — فوٹو: فائل 

اسلام آباد: وفاقی وزرات خزانہ کا کہنا ہے کہ روپے کی قدر میں کمی سے ملکی قرضوں میں 4 ہزار 270 ارب روپے کا اضافہ ہوا۔

وزرات خزانہ کے اعلامیے کے مطابق حکومت نے مالی سال 19-2018 میں 3 ہزار 440 ارب روپے قرض لیا، حکومت نے قرضہ بجٹ خسارہ پورا کرنے کیلئے لیا، حکومت کی جانب سے پچھلے سال 11 ہزار ارب کا قرض لینے کی خبریں درست نہیں۔

اعلامیے میں بتایا گیا کہ نجی شعبے کے غیرملکی قرضوں میں گزشتہ سال 900 ارب روپے اضافہ ہوا، نجی شعبے کے غیرملکی قرضوں کی ذمہ داری حکومت کی نہیں ہے۔

وزارت خزانہ کا کہنا ہے کہ گزشتہ سال 500 ارب روپے قرض سرکاری اداروں کی مالی ضروریات کیلئے لیا گیا۔

وزارت خزانہ کے مطابق قرضوں میں 4 ہزار270 ارب روپے کا اضافہ روپے کی قدر میں کمی سے ہوا، گزشتہ حکومت نے روپے کی قدر میں مصنوعی اور غیرحقیقی استحکام رکھا۔

اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ گزشتہ حکومت کی ناقص پالیسوں سے بھاری کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ ہوا جس پر قابو پانے کیلئے روپے کی قدر میں کمی لانا پڑی جبکہ مالی سال 19-2018 میں قرضوں اور ادائیگیوں کی مد میں 10 ہزار 330 ارب روپے اضافہ ہوا۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM