Can't connect right now! retry
Advertisement

07 فروری ، 2018

جدید ٹیکنالوجی سے لیس پہلے مسافر بردار ڈرون نے اڑان بھرلی

خودکار مسافر بردار ڈرون ای ہینگ 184—۔فوٹو/ بشکریہ ای ہینگ فیس بک پیج

بیجنگ: دنیا کے پہلے مکمل طور پر خودکار مسافر بردار ڈرون 'ای ہینگ 184' نے چین کے شہر گوانگژو سے اپنی پہلی کامیاب اڑان بھری۔

چین کی ٹیکنالوجی کمپنی ای ہینگ انکارپوریشن کے چیف ایگزیکٹو آفیسر ہو ہواژی کے مطابق ڈرون کی کامیاب پرواز کے بعد سائنس فکشن فلموں کے مناظر بہت جلد روزمرہ انسانی زندگی کا حصہ ہوں گے۔

بجلی سے چلنے والا  ای ہینگ ڈرون 100 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے سمندر کے اوپر ایک سو کلو وزنی مسافر کو لے کر 23 منٹ تک پرواز کرسکتا ہے۔







کمپنی کے مطابق ڈرون کی ہزار سے زائد بار آزمائش کی جاچکی ہے اور یہ 50 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے چلنے والی ہوائیں برداشت کرسکتا ہے۔

ڈرون کو ٹریفک جام سے بچنے کے لیے ہوائی ٹیکسی، حادثات میں پھنسے لوگوں کو ریسکیو کرنے اور سیاحتی مقاصد کے لیے استعمال کیا جائے گا۔

کمپنی کا کہنا ہے کہ یہ ڈرون سال کے اندر اندر کمرشل بنیادوں پر پرواز کرے گا۔

Advertisement

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM