کھیل
15 اکتوبر ، 2021

ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ میں کوئی بھی ایک ٹیم فیورٹ نہیں قرار دی جاسکتی، مرلی دھرن

ٹی ٹوئنٹی ورلڈکپ میں یواے ای اور عمان کی کنڈیشنز میں کسی بھی ایک ٹیم کوفیوریٹ نہیں کہہ سکتا، سابق اسپنر کا کالم— فوٹو:فائل
ٹی ٹوئنٹی ورلڈکپ میں یواے ای اور عمان کی کنڈیشنز میں کسی بھی ایک ٹیم کوفیوریٹ نہیں کہہ سکتا، سابق اسپنر کا کالم— فوٹو:فائل

سری لنکا کے لیجنڈ کرکٹر مرلی دھرن کا کہنا ہے کہ ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ میں کوئی بھی ایک ٹیم فیورٹ نہیں قرار دی جاسکتی  جبکہ میگا ایونٹ میں اسپنرز کا کردار کافی اہم ہوگا۔

آئی سی سی کی ویب سائٹ پر کالم میں مرلی دھرن نے لکھا کہ ٹی ٹوئنٹی ورلڈکپ میں یواے ای اور عمان کی کنڈیشنز میں کسی بھی ایک ٹیم کوفیوریٹ نہیں کہہ سکتا، کوئی بھی ٹیم اس ورلڈ کپ کوجیت سکتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ورلڈ کپ میچزمیں اننگزکے ابتدائی 6 اوورز اہم ہوں گے، 70 سے 80 فیصد میچ کا فیصلہ اننگز کے ابتدائی اوورز میں ہی ہوجائے گا۔

سری لنکن لیجنڈ نے مزید کہا کہ اگراچھا اسٹارٹ نہیں ملا تو بعد میں ٹیموں کا کم بیک کرنا کافی مشکل ہوجائے گا، اس لیے اس فارمیٹ میں شروعات کی کافی اہمیت ہے۔

سابق اسپنرنے اس امر پر خوشی کا اظہار کیا کہ بیٹسمینوں کے اس فارمیٹ میں اسپنرزکا کردار بھی اہم ہوگیا ہے، ٹی ٹوئنٹی میں بولرز دفاعی بولنگ کرے اور رنز روکیں تو کامیاب رہتے ہیں۔

ان کا بولرز کو مشورہ دیتا ہوئے کہنا تھا کہ بولرز کےلیے اہم ہے کہ بیٹسمین کے ذہن کو پرکھ کر بولنگ کریں۔

سابق لیجنڈ کا کہنا تھا کہ متحدہ عرب امارات کی کنڈیشنز میں اسپنرز کا رول کافی اہم ہوگا کیوں کہ یہاں حال ہی میں ہونے والے میچز میں بیٹرز کو کافی مشکل پیش آئی ہیں۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM