کاروبار
18 جون ، 2022

نان فائلرز کیلئے گاڑیوں کی رجسٹریشن ٹیکس میں 100 فیصد اضافہ

چھوٹی گاڑیوں پر ٹیکس نہ لگایا جائے، چاہے وہ فائلر ہے یانان فائلر: چیئرمین قائمہ کمیٹی برائے خزانہ/ فائل فوٹو
چھوٹی گاڑیوں پر ٹیکس نہ لگایا جائے، چاہے وہ فائلر ہے یانان فائلر: چیئرمین قائمہ کمیٹی برائے خزانہ/ فائل فوٹو

اسلام آباد: سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ نے ایف بی آر میں گوشوارے جمع  نہ کرانے والوں کے لیے گاڑیوں کی رجسٹریشن کا ٹیکس 100فیصد بڑھانے کی تجویز منظور کرلی۔

سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ کے اجلاس میں چیئرمین ایف  بی آر اور  دیگر حکام شریک ہوئے جس میں چیئرمین کمیٹی نے ایف بی آر حکام  کو ہدایت کی کہ جو بھی قانون سازی ہو اسے بل کی شکل میں لایا جائے اور آرڈیننس کے ذریعے قانون سازی نہ کی جائے۔

ایف بی آر حکام  نے کمیٹی کو بتایا  کہ پائلٹ کیلئے فلائنگ الاؤنس کو بھی اس کی تنخواہ میں شامل کیا گیا ہے، پہلے فلائنگ الاؤنس پر 7.5 فیصد ٹیکس تھا، فلائنگ الاؤنس پر ٹیکس لگانا درست نہیں، تنخواہ پر ٹیکس لیا جارہا ہے۔

سینیٹ کی قائمہ کمیٹی خزانہ نے فلائنگ الاؤنس تنخواہ میں ضم کرکےٹیکس لگانےکی مخالفت کی۔

ایف بی آر حکام نے کمیٹی کو بتایا  کہ ریٹائرڈ اور  سرونگ آرمی ملازمین کیلئے پراپرٹی پرکیپٹل گین ٹیکس چھوٹ واپس لی جارہی ہے، حکومتی ملازمین کیلئے بھی پراپرٹی پرکیپٹل گین ٹیکس چھوٹ واپس لی جارہی ہے۔

ایف بی آر حکام کے مطابق سینیٹ کی قائمہ کمیٹی خزانہ نے ایف بی آرکی  تجویز منظور  کرلی ہے۔

ایف بی آر حکام نے بتایا کہ گاڑیوں پر نان فائلر کیلئے ٹیکس 100 فیصد بڑھا دیا گیا ہے اس  پر چیئرمین کمیٹی نے کہا کہ چھوٹی گاڑیوں پر ٹیکس نہ لگایا جائے، چاہے وہ فائلر ہے یانان فائلر۔

چیئرمین ایف بی آر نے کہا کہ نان فائلرگاڑی خریدسکتاہے تو ٹیکس دے، نان فائلر جو بھی پراپرٹی خریدے گا اس پر 5 فیصد ٹیکس دے گا۔

کمیٹی نے نان فائلر پر گاڑیوں کی رجسٹریشن کا ٹیکس 100 فیصد بڑھانے کی تجویز منظور کرلی۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM