کھیل
29 ستمبر ، 2022

ویڈیو: آسٹریلیا کے بڑےگراؤنڈز میں چھکے مارنا کوئی مسئلہ نہیں: افتخار

پاکستان کرکٹ ٹیم کے مڈل آرڈر بیٹر افتخار احمد کا کہنا ہے کہ ہمارا اس وقت فوکس سیریز جیتنے پر ہے،ہم ہوم گراؤنڈ پر کھیل رہے ہیں، ہمیں سیریز اپنے نام کرنی ہے ، ہم اس کیلئے محنت کر رہے ہیں سیریز نام کرنے میں کامیاب ہوں گے۔

جیو نیوز کو خصوصی انٹرویو دیتے ہو ئے افتخار احمد نے کہا کہ سیریز میں ہمیں برتری حاصل ہے جو کہ اچھی بات ہے۔ اگلے ہی میچ میں کوشش ہو گی کہ ہم فیصلہ کن برتری حاصل کرتے ہو ئے سیریز جیتیں۔ اس وقت تک سیریز  بڑی شاندار جا رہی ہے فینز اور کھلاڑی لطف اندوز ہو رہے ہیں، ٹی ٹوئنٹی کی خوبصورتی یہی ہے کہ میچز  ٹف ہوتے ہیں، پاکستان اور انگلینڈ کی ٹیمیں مضبوط ہیں، آخر تک میچز جا رہے ہیں اور کھلاڑی پر اعتماد ہیں کہ چاہے ہدف کا تعاقب کرنا ہو یا دفاع، ہم جیت سکتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اس وقت پاکستان کرکٹ ٹیم کا مڈل آرڈر بیٹنگ کا شعبہ تنقید کی زد میں ہے اور اس کی وجہ یہ ہے کہ مڈل آرڈر بیٹرز تسلسل کے ساتھ پرفارم نہیں کر رہے۔ افتخار احمد تسلیم کرتے ہیں کہ مڈل آرڈر بیٹرز کی کارکردگی میں بہتری کی گنجائش ہے، مڈل آرڈر کی کارکردگی اس سے بہتر ہو سکتی ہے، کوچز ہمیں مختلف ڈرلز کرا رہے ہیں جلد فرق نظر آئے گا۔

افتخار نے کہا کہ تنقید اپنی جگہ ہے ، تنقید ہوتی رہتی ہے ، ہمیں بس اچھا کھیلنے کی کوشش کرنی ہے  لیکن یہ چیز بھی ہے کہ ہمارے ٹاپ آرڈر بیٹرز بابر اعظم اور محمد رضوان بہت اچھا کھیل رہے ہیں اور مڈل آرڈربیٹرز کو کم وقت ملتا ہے  لیکن ہم پروفیشنل ہیں ہمیں جتنا بھی وقت ملے ہمیں تسلسل کے ساتھ کھیلنا ہے۔

جارح مزاج بیٹر نے کہا کہ کمبی نیشن ایسا بنا ہوا ہے جس کی وجہ سے مجھے بولنگ کا موقع کم ملتا ہے، ہمارے تین فاسٹ بولرز ہیں اور ان کے ساتھ شاداب خان اور محمد نواز ہوتے ہیں، میں کم بولنگ کروا سکتا ہوں  لیکن میں بولنگ کو بہتر بنانے کی کوشش کرتا ہوں ، ثقلین مشتاق کے ساتھ کام کرنے کی وجہ سے بولنگ بہتر ہو رہی ہے۔

مڈل آرڈر بیٹر نے کہا کہ کراچی کے مقابلے میں لاہور کی کنڈیشنز مختلف ہیں  اوس کی وجہ سے پہلی دوسری اننگز کا فرق پڑتا ہے۔

افتخار احمد نے کہا کہ نیوزی لینڈ اور آسٹریلیا میں کنڈیشنز مختلف ہوں گی، ہم آسٹریلیا کی کنڈیشنز میں اچھا کھیل سکتے ہیں، مجھے وہاں کھیلنے کا تجربہ ہے جس کا مجھے فائدہ ہو گا،  آسٹریلیا کے بڑےگراؤنڈز میں چھکے مارنا کوئی مسئلہ نہیں، ایسا نہیں ہے کہ ہمارے بیٹرز آسٹریلیا کے اسٹیڈیمز کے اسٹینڈز  میں گیند نہیں پھینک سکتے۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM