Can't connect right now! retry

ایم کیو ایم کے شہید کارکنوں کی یادگار ’نامعلوم‘ افراد نے مسمار کردی

کراچی میں گزشتہ تین دہائی کے دوران پر تشدد واقعات یا پولیس مقابلوں میں ہلاک ہونے والے متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیوایم) کے کارکنان کی عزیزآباد کے جناح گراؤنڈ میں واقع یادگار شہداء ’نامعلوم‘ افراد نے مسمار کردی۔

ایس ایچ او عزیزآباد حاجی ثناءاللہ نے اس واقعہ کی تصدیق کی ہے، ان کا کہنا ہے کہ پولیس کو اس واقعے کی اطلاع ہفتے کی شام ہوئی۔

نامعلوم افراد نے کس وقت یادگار شہداء کا مینار توڑا اور اس کے ڈھانچے کے ساتھ ساتھ عمارت کو کب نقصان پہنچایا گیا اس بارے میں پولیس نے لاعلمی ظاہر کی ہے۔

ایم کیوایم کے رہنماؤں اور کارکنوں کو عزیزآباد کے یاسین آباد کے قبرستان میں سپرد خاک کیا جاتا رہا ہے۔ ایم کیو ایم کی قیادت کی جانب سے تمام شہداء کی ایک یادگار جناح گراؤنڈ میں بنائی گئی تھی۔

ایم کیو ایم کی جانب سے ہر سال یوم شہداء اسی مقام پر منایا جاتا رہا ہے۔ ایم کیو ایم کے مرکز نائن زیرو پر جانے والے سرکاری اور سیاسی رہنماؤں کو یادگار شہداء پر بھی حاضری دینا پڑتی تھی۔

ایم کیوایم میں دھڑے بندی کے بعد اس سلسلے میں سرگرمیاں بھی ماند پڑگئی تھیں اور گذشتہ چند سال سے یادگار شہداء پر حاضری کی بجائے ایم کیوایم کے تنظیمی دھڑے اپنے اپنے طور پر شہداء کی یاد مناتے ہیں۔

اس واقعہ کے بعد ایم کیو ایم پاکستان کی قیادت جناح گراؤنڈ پہنچ گئی اور پارٹی کی جانب سے یادگار شہداء کو دوبارہ تعمیر کرنے کا اعلان کیا گیا ہے۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM