Can't connect right now! retry

دنیا
16 ستمبر ، 2020

بشارالاسد کو قتل کروانےکا پورا موقع تھا لیکن فیصلہ تبدیل کرلیا، ڈونلڈ ٹرمپ

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نےدعویٰ کیا ہےکہ ان کے پاس شامی صدر بشارالاسد کو قتل کروانےکاموقع موجود تھا لیکن انہوں نےفیصلہ تبدیل کرلیا۔

ایک امریکی ٹی وی کو دیے گئے انٹرویو میں ٹرمپ نے اعتراف کیا کہ وہ 2017 میں شامی صدر بشارالاسد کو قتل کرنا چاہتے تھے  اور اس کے لیے تمام تیاریاں بھی مکمل تھیں مگر اس وقت کے وزیر دفاع جیمس میٹس اس آپریشن کے مخالف تھے اور انہوں نے ایسا نہ کرنےکامشورہ دیا تھا۔

ٹرمپ  کاکہنا تھاکہ مجھے  بشارالاسد کو نشانہ نہ بنانے کے فیصلے پرکوئی افسوس نہیں ہے، میں انہیں کوئی اچھا شخص نہیں سمجھتا اور میں ان کی جان لینا چاہتا تھا مگر میرے وزیر دفاع اس کے خلاف تھے۔

خیال رہے کہ اس سے قبل امریکا کے مشہور صحافی باب ووڈورڈ نے 2018 میں اپنی کتاب میں انکشاف کیا تھا کہ ڈونلڈ ٹرمپ نے بشارالاسد کے قتل کا منصوبہ تیارکیا تھا تاہم اس وقت ٹرمپ نے ایسے کسی بھی منصوبے کی تردید  کرتے ہوئے کہا تھا کہ اس پر کبھی غور ہی نہیں کیاگیا۔

اب امریکی ٹی وی کو انٹرویو دیتے ہوئے ٹرمپ نے خود ہی اس منصوبےکا اعتراف کرلیا ہے۔

تجزیہ کاروں نے ٹرمپ کے اس اعتراف کو نومبر  میں ہونے والے الیکشن کے لیے  تشہیری حربہ قرار دیا ہے۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM