Can't connect right now! retry

انٹرٹینمنٹ
01 ستمبر ، 2019

'بھارت میں رہنا والد کا فیصلہ، پاکستان میرا گھر ہے میں نے یہیں کام کرنا پسند کیا'

اذان خان بھارتی شہریت حاصل کرنے والے موسیقار و گلوکار عدنان سمیع کے صاحبزادے ہیں۔ فوٹو: فائل

بھارتی شہریت حاصل کرنے والے گلوکار عدنان سمیع کے صاحبزادے اذان خان کا کہنا ہے کہ ان کے والد نے بھارتی شہریت کا فیصلہ کیا لیکن پاکستان میرا گھر ہے اور میں نے یہاں رہنے کا انتخاب کیا ہے۔

میوزک ڈائریکٹر اذان خان نے برطانوی نشریاتی ادارے کو انٹرویو دیتے ہوئے بتایا کہ وہ جانتے ہیں کہ ان کے والد بھارتی شہریت اور اس کی حمایت کرنے کی وجہ سے ایک متنازع شخصیت ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ میرے والد نے کچھ فیصلے کیے اور بھارت کا انتخاب کیا لیکن مجھے کوئی حق نہیں کہ میں ان سے سوال کروں کیونکہ وہ میرے والد ہیں اور میں ان کی عزت کرتا ہوں۔

اذان سمیع خان کا کہنا تھا کہ میرے والد سے میرا رشتہ دوستوں والا ہے کیونکہ میں اپنی والدہ کے پاس پلا بڑا ہوں۔


فلم 'سپر اسٹار'کا زبردست میوزک ڈائریکٹ کرنے والے اذان خان نے مزید بتایا کہ والد کی طرح میرے بھی بھارت میں متعدد دوست ہیں لیکن مجھ پر تھا کہ میں کہاں کا انتخاب کرتا ہوں۔

انہوں نے کہا کہ میں اپنی والدہ زیبا بختیار کے ساتھ پاکستان میں رہا اور یہی پلا بڑا ہوا ہوں، پاکستان میرا کا گھر ہے اور میں نے یہیں رہنے اور کام کرنے کو پسند کیا ہے۔


واضح رہے کہ گلوکار عدنان سمیع نے 1993 میں پاکستانی اداکارہ زیبا بختیار سے پہلی شادی کی تھی جن سے ان کے ایک بیٹے اذان خان ہیں لیکن ذاتی وجوہات کے باعث دونوں میں تین سال کے بعد ہی طلاق ہو گئی تھی۔

بعدازاں عدنان سمیع 2001 میں بھارت منتقل ہو گئے جہاں انہوں نے 2010 میں بھارتی دوشیزہ سے شادی کی جن سے بھی ان کا ایک بیٹا ہے جب کہ 2015 میں عدنان سمیع نے بھارتی شہریت حاصل کی۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM