کھیل
06 اگست ، 2022

عالمی معیار کی ٹریننگ نہیں کرائی جاتی، سلور میڈل بھی کم نہیں: انعام بٹ


فائنل میں کافی اچھا مقابلہ ہوا، ہمیں انٹرنیشنل ٹریننگ نہیں کرائی جاتی،انٹرنیشنل ٹریننگ اوردورے ہوں توکھلاڑی بہتر پرفارم کرتے ہیں: انعام بیں__فوٹو فائل
فائنل میں کافی اچھا مقابلہ ہوا، ہمیں انٹرنیشنل ٹریننگ نہیں کرائی جاتی،انٹرنیشنل ٹریننگ اوردورے ہوں توکھلاڑی بہتر پرفارم کرتے ہیں: انعام بیں__فوٹو فائل

برمنگھم میں جاری کامن ویلتھ گیمز کے ریسلنگ مقابلے میں سلور میڈل جیتنے والے قومی پہلوان انعام بٹ کا کہنا ہے کہ سلور میڈل ملا، یہ بھی کم نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ سیمی فائنل میں گھٹنے میں تکلیف تھی، فائنل میں کافی اچھا مقابلہ ہوا۔

انعام بٹ کا کہنا تھا ہمیں عالمی معیار کی ٹریننگ نہیں کرائی جاتی، عالمی معیار کی ٹریننگ اور دورے ہوں توکھلاڑی بہتر  پرفارم کرتے ہیں۔

برانز میڈلسٹ عنایت اللہ نے جیو نیوز سے گفتگو میں کہاکہ ہماری سہولیات کم ہیں، ٹریننگ پارٹنر بھی اس معیار کے نہیں ہوتے۔

عنایت اللہ کا کہنا تھا کہ فیڈریشن کے پاس اتنا بجٹ نہیں ہوتا کہ ہمیں باہر  بھیجے، اگر حکومت سپورٹ کرے تو ہم قومی پرچم دنیا میں بلند کر سکتے ہیں۔

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM