Can't connect right now! retry
Advertisement

پاکستان
13 اکتوبر ، 2017

حکومت جاتی ہے تو جائے، جمہوریت نہیں جانے دینگے: عمران خان

پشاور: پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خانے کہا ہے کہ شاہد خاقان عباسی حکومت جاتی ہے تو جائے مگر ہم پاکستان سے جمہوریت جانے نہیں دیں گے۔

عمران خان نے پشاور میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آصف زرداری چار دن سے پشاور کے چکر لگا رہے ہیں اور زرداری کرپشن کی بات کررہے ہیں جسے میں قیامت کی نشانی سمجھتا ہوں۔

ان کا کہنا تھا کہ ’زرداری تم بہت بڑے ڈاکو ہو، میں سندھ آرہا ہوں اور لوگوں کو تیار کررہا ہوں تاکہ خوف کی زنجیریں ٹوٹ جائیں۔‘

انہوں نے کہا کہ قوم ٹیکس دیتی ہے اور یہ ملک کا پیسہ لے کر باہر لے جاتے ہیں، نواز شریف کہتے ہیں کہ انہیں کیوں نکالا تو میں بتاتا ہوں کہ اس لیے نکالا کہ 300 ارب قوم کا چوری کرکے باہر لے گئے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ نواز شریف کہتے ہیں کہ انہیں اقامہ کی وجہ سے نکالا گیا تو ان کا منی لانڈرنگ کا طریقہ ہی اقامہ ہے جس ذریعے سے پیسہ منی لانڈرنگ کرکے باہر لے جانا ہے۔

انہوں نے کہا کہ آج اسلام آباد کی عدالت پر ہلہ بولا گیا جس میں جج جان بچا کر باہر بھاگا کیوں کہ ان کی کوشش ہے کہ احتساب سے بچ جائیں، اگر منی لانڈرنگ میں نواز شریف کو سزا ہوجاتی ہے تو 300 ارب روپے سے زیادہ پیسہ ضبط ہوکر پاکستان آجائے گا۔

ان کا کہنا ہے کہ ’یہ اپنا پیسا بچانے کے لیے سپریم کورٹ اور فوج کو بدنام کررہے ہیں۔‘

وزیر اعظم کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ شاہد خاقان عباسی تم وزیراعظم ہو یا شریف خاندان کے درباری؟ شاہد خاقان عباسی کی حکومت جاتی ہے تو جائے مگر ہم پاکستان سے جمہوریت جانے نہیں دیں گے۔

چیرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ محمود خان اچکزئی اور مولانا فضل الرحمان نے پختون خوا پر بڑا ظلم کیا ہے اور کے پی اور فاٹا کے انضمام کی مخالفت کی لیکن اب ہم پرویز خٹک کے ساتھ مل کر فاٹا کے انضمام کے لیے پورا زور لگائیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ اسفند یار ولی، نواز شریف، فضل الرحمان اور آصف زرداری کرپشن کے بادشاہ ہیں اور یہ سب مجھے کہتے ہیں کہ کہ میں انہیں گالیاں دیتا ہوں۔

انہوں نے کہا کہ 2018 میں انصاف کا انقلاب آئے گا، یہ ہی پاکستان عظیم ملک بنے گا اور جب تک ادارے قانون کے دائرے میں کام نہیں کریں گے تو ملک آگے نہیں بڑھ سکتا اسی لیے ہم اداروں کومضبوط کریں گے۔

Advertisement