پاکستان
12 جون ، 2022

کسی کے غلام نہیں، جدوجہد جاری رکھیں گے چاہے جان بھی چلی جائے: یاسمین راشد

رانا ثنااللّہ کو اگر سانحہ ماڈل ٹاؤن کیس میں سزا مل جاتی تو ایسی حرکتیں نہ کرتا: پی ٹی آئی رہنما۔ فوٹو فائل
رانا ثنااللّہ کو اگر سانحہ ماڈل ٹاؤن کیس میں سزا مل جاتی تو ایسی حرکتیں نہ کرتا: پی ٹی آئی رہنما۔ فوٹو فائل

لاہور: پاکستان تحریک انصاف کی مرکزی رہنما ڈاکٹر  یاسمین راشد کا کہنا ہے ہم ایک آزاد قوم ہیں کسی کے غلام نہیں، ملکی سلامتی کے لیے مسلسل جدوجہدکریں گے چاہے اس میں ہماری جان بھی چلی جائے۔

ڈاکٹر یاسمین راشد کا سیشن کورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ 25 مئی کو پولیس نے ڈنڈوں سے میری گاڑی کے شیشے توڑے، ایسی پولیس گردی میں نے آج تک نہیں دیکھی، مجھے تو وہ افراد پولیس والے لگ ہی نہیں رہے تھے، میں نے بات کرنا چاہی لیکن انہوں نے ڈنڈے برسا دیے، ایف آئی آر کٹوانے گئی تو ایس ایچ او نے کہا اوپر سے آرڈر ہے ایف آئی آر  درج نہیں کر سکتے۔

سابق صوبائی وزیر کا کہنا تھا کہ 25 مئی کو جو بربریت اور غنڈہ گردی پولیس نے کی وہ سب میڈیا والوں نے دیکھی، ہم تین نہتی عورتیں اسلام آباد جا رہی تھیں، مجھے اور میری بیٹی کو گاڑی سے اتارنے کی کوشش کی گئی، یہ نکمی حکومت ہے، میری عمر دیکھیں مجھ پر دہشت گردی کی دفعات درج کی گئیں، رانا ثنااللّہ کو اگر سانحہ ماڈل ٹاؤن کیس میں سزا مل جاتی تو ایسی حرکتیں نہ کرتا۔

ان کا کہنا تھا کہ ہمارے 3 ورکرز شہید کر دیے گئے، ہم اپنے ہر کارکن کا حساب لیں گے، یہ لوگ سمجھتے تھے کہ پی ٹی آئی ممی ڈیڈی پارٹی ہے لیکن ہمارے کارکنوں نے ثابت کیا کہ تحریک انصاف ممی ڈیڈی پارٹی نہیں ہے۔

پی ٹی آئی رہنما کا کہنا تھا ہم پاکستان سے محبت کرنے والے غیرت مند لوگ ہیں، ہم محکوم یا کسی کے غلام نہیں ہیں بلکہ پاکستان کی سالمیت کے لیے نکلے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہم ایک آزاد قوم ہیں اور مسلسل جدوجہد کریں گے چاہے اس میں ہماری جان ہی کیوں نہ چلی جائے۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM