Time 15 اپریل ، 2024
کاروبار

ایف بی آر نے کسٹمز رولز میں مزید ترامیم کا نوٹیفکیشن جاری کردیا

ایف بی آر کے مطابق پاکستان میں فارن سپلائرز کو کاروبار کرنے کی اجازت دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے— فوٹو: فائل
ایف بی آر کے مطابق پاکستان میں فارن سپلائرز کو کاروبار کرنے کی اجازت دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے— فوٹو: فائل

 اسلام آباد: فیڈرل بیورو آف ریونیو (ایف بی آر) نے کسٹمز  رولز 2001 میں مزید ترامیم کے لیے نوٹیفکیشن جاری کردیا۔

ایف بی آر کے مطابق پاکستان میں فارن سپلائرز کو کاروبار کرنے کی اجازت دینےکا فیصلہ کیا گیا ہے، غیرملکی سپلائرز  یہاں اپنا رجسٹرڈکاروبار قائم کرسکیں گے۔

ایف بی آر کے مطابق  فارن سپلائرز کو ذیلی کمپنی قائم کرنے کابھی اختیار حاصل ہوگا، خام تیل اور  دیگر پیٹرولیم مصنوعات درآمد کرنے کی اجازت ہوگی جب کہ پیٹرولیم مصنوعات مقامی مارکیٹ میں فروخت یا برآمدکرنےکی اجازت بھی ہوگی، پیٹرولیم مصنوعات درآمد کرکے بیرون ملک برآمد کرنے کی بھی اجازت ہوگی۔

ایف بی آر کا کہنا ہے کہ درآمد کردہ مال کسٹمز اسٹوریج فیسلیٹی میں رکھنے کی سہولت ملےگی، فارن سپلائرز پاکستان میں کسی بھی جگہ ویئر ہاؤس استعمال کرسکیں گے، انہیں ویئر ہاؤس رینٹ، پورٹ اور دیگر سروس چارجز ادا کرنے ہوں گے۔

نوٹیفکیشن کے مطابق واجبات فارن کرنسی یعنی ڈالرز میں بینکنگ چینلز کے ذریعے ادا کرنا ہوں گے، فارن سپلائز یا ان کے سبسڈری کو اسٹیٹ بینک اور کسٹمز کی ہدایات پر عمل کرنا ہوگا۔