Can't connect right now! retry

دلچسپ و عجیب
12 اپریل ، 2018

سعودی عرب میں دو پہاڑ کاٹ کر بنایا گیا دنیا کا سب سے بڑا عجائب گھر

سعودی عرب میں دو پہاڑوں کو کاٹ کر بنایا گیا ’العُلی‘عجائب گھر—.فوٹو بشکریہ العربیہ

سعودی عرب میں دو پہاڑوں کے درمیان قائم کیا گیا ’العُلی‘ میوزیم دنیا کا سب سے بڑا اوپن عجائب گھر  ہے جہاں موجود دلکش نقش و نگار سے مزین مقبروں کو ثقافتی ورثے کی حیثیت حاصل ہے جس نے سیاحوں کی توجہ اپنی جانب مبذول کروالی ہے۔

سعودی نیوز ویب سائٹ العربیہ کے مطابق ’العُلی‘ دنیا کا سب سے بڑا اوپن میوزیم ہے جو ایک پہاڑی علاقے میں واقع ہے۔ 

ظہورِ اسلام سے قبل آباد اس وادی کے باسی پہاڑوں کو تراش کر مقبرے اور گھر بناتے تھے اور پھر ان کی سجاوٹ کے لیے نقش و نگار اور قدیم ترین زبان میں خطاطی کرتے تھے۔

مدینہ منورہ سے 350 کلومیٹر کے فاصلے پر واقع مدائن صالح نامی پہلی صدی کے ان آثارِ قدیمہ میں 131 پتھروں اور چٹانوں کو تراش کر بنائے گئے گھر موجود ہیں۔

اس شہرِ خموشاں کو دیکھ کر ماہرین نے اندازہ لگایا ہے کہ یہاں کی آبادی اُس وقت چار پانچ لاکھ کے قریب ہوگی۔ 

—.فوٹو بشکریہ العربیہ

اقوامِ متحدہ کے ادارے یونیسکو نے اس مقام کو سعودی عرب کا عالمی ورثہ قرار دیا ہے جو دنیا کا سب سے بڑا اوپن میوزیم بھی ہے۔

—.فوٹو بشکریہ العربیہ

سعودی کاؤنسل کے ایک عہدیدار کے مطابق اسے بطور رائل کمیشن تیار کیا جارہا ہے جس میں عرب کی تاریخ اور ثقافت واضح ہوگی۔

العُلی رائل کمیشن کے جنرل ڈائریکٹر عمر مدنی کا کہنا ہے کہ آئندہ 3 سے 5 برس میں یہ سیاحوں کے لیے کھول دیا جائے گا جہاں ملکی اور غیر ملکی سیاح سیر کے لیے آسکتے ہیں۔ 

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM