دنیا
Time 21 فروری ، 2024

جنگی جنون میں مبتلا نیتن یاہو کا یرغمالیوں کی رہائی کیلئے حماس کی شرائط ماننے سے انکار

حماس کے شرائط مان کر یرغمالیوں کو واپس لانے کا مطلب اسرائیلی ریاست کی شکست ہوگا: نیتن یاہو — فوٹو: فائل
حماس کے شرائط مان کر یرغمالیوں کو واپس لانے کا مطلب اسرائیلی ریاست کی شکست ہوگا: نیتن یاہو — فوٹو: فائل

جنگی جنون میں مبتلا اسرائیلی وزیراعظم بن یامین نیتن یاہو نے یرغمالیوں کی رہائی کے بدلے حماس کے شرائط ماننے سے انکار کردیا ہے۔

اپنے ایک بیان میں اسرائیلی وزیراعظم نے کہا کہ ہم پر اندرونی اور بیرونی دباؤ ہے کہ اپنے مقاصد حاصل کیے بنا ہی جنگ ختم کریں اور کسی بھی قیمت پر یرغمالیوں کی رہائی کا معاہدہ کرلیں لیکن ہم یرغمالیوں کی رہائی کیلئے حماس کے شرائط نہیں مان سکتے۔

نیتن یاہو کا کہنا تھا کہ حماس کے شرائط مان کر  یرغمالیوں کو واپس لانے کا مطلب ہوگا کہ اسرائیلی ریاست نے حماس کے سامنے اپنی شکست قبول کر لی۔

اسرائیلی ریڈیو سے بات کرتے ہوئے اسرائیلی وزیر بیزلیل سیموٹریک نے کہا کہ نیتن یاہو نے واضح کردیا ہے کہ ہم اسرائیلی یرغمالیوں کی رہائی کی کوئی قیمت ادا نہیں کریں گے۔

سیموٹریک نے کہا کہ اسرائیلی وزیر اعظم کیلئے بھی یرغمالیوں کی رہائی بہت اہم ہے لیکن اس کیلئے کوئی قیمت ادا نہیں کی جائے گی بلکہ غزہ پر فوجی دباؤ بڑھاتے ہوئے حماس کو شکست دیکر تمام  یرغمالیوں کو رہا کروایا جائے گا۔

واضح رہے کہ اسرائیلی وزیراعظم کا یہ بیان جنگ بندی اور یرغمالیوں کی رہائی سے متعلق مذاکرات میں پیشرفت کیلئے امریکی نمائندہ خصوصی برائے مشرق وسطیٰ کے دورے سے قبل سامنے آیا ہے۔

مزید خبریں :