دنیا
Time 29 فروری ، 2024

دنیا کے سب سے بڑے ائیرپورٹ کی ایک مسلم ملک میں تعمیر

مستقبل میں یہ ائیرپورٹ ایسا نظر آئے گا / فوٹو بشکریہ دبئی ائیرپورٹس
مستقبل میں یہ ائیرپورٹ ایسا نظر آئے گا / فوٹو بشکریہ دبئی ائیرپورٹس

دبئی دنیا کی بلند ترین عمارت برج الخلیفہ کا گھر ہے اور اس کے ساتھ ساتھ وہاں بہت کچھ منفرد ہے۔

مستقبل قریب میں دنیا کا سب سے بڑا ائیرپورٹ بھی وہاں ہوگا۔

المکتوم انٹرنیشنل ائیرپورٹ 2010 سے فعال ہے مگر اب اسے مزید توسیع دینے پر کام کیا  جا رہا ہے۔

دبئی کے جنوب مغرب میں 20 میل کی دوری پر موجود یہ ائیرپورٹ مستقبل میں دنیا کا مصروف ترین ہوائی اڈہ بھی ہوگا۔

دبئی ائیرپورٹس نامی ائیرپورٹ اتھارٹی کے مطابق جب المکتوم انٹرنیشنل ائیرپورٹ کا کام مکمل ہو جائے گا تو وہاں ہر سال 16 کروڑ سے زائد مسافروں کی آمد ہوگی۔

یہ ائیرپورٹ 2010 سے فعال ہے / فوٹو بشکریہ سی این این
یہ ائیرپورٹ 2010 سے فعال ہے / فوٹو بشکریہ سی این این

اس وقت ہارٹسفیلڈ جیکسن اٹلانٹا انٹرنیشنل دنیا کا مصروف ترین ائیرپورٹ ہے جہاں 2022 میں لگ بھگ 10 کروڑ مسافروں کی آمد ہوئی تھی۔

2023 میں دبئی ائیر شو کا انعقاد المکتوم انٹرنیشنل ائیرپورٹ پر ہوا تھا جس کے دوران حکام نے توسیعی منصوبے کا اشارہ دیا تھا۔

دبئی ائیرپورٹس کے چیف ایگزیکٹو پال گریفتھ کے مطابق ہم اپنے صارفین کی ضروریات کے مطابق توسیع اور سرمایہ کاری کو توجیح دیں گے اور یہ کام اس وقت تک جاری رہے گا جب تک اسے مکمل نہیں کرلیا جاتا۔

مگر اس کو توسیع دینے پر کام کیا جا رہا ہے / فوٹو بشکریہ دبئی ائیرپورٹس
مگر اس کو توسیع دینے پر کام کیا جا رہا ہے / فوٹو بشکریہ دبئی ائیرپورٹس

انہوں نے مزید بتایا کہ موجودہ گنجائش کو بڑھانے کے لیے جدید ٹیکنالوجی کا استعمال کیا جائے گا۔

انہوں نے ائیرپورٹ کی تعمیر مکمل ہونے کے وقت کے بارے میں نہیں بتایا مگر نومبر 2023 میں ایک انٹرویو کے دوران ان کا کہنا تھا کہ ایسا 2030 کی دہائی میں کسی وقت ہوگا۔

دبئی ائیر شو کے موقع پر انہوں نے بتایا کہ نئے میگا ائیرپورٹ کا ڈیزائن تیار ہے جبکہ ایونٹ کے دوران اس کا 3 ڈی ماڈل بھی پیش کیا گیا۔

یہ ائیرپورٹ ایک اور بڑے تعمیراتی منصوبے دبئی ساؤتھ کا دل ہوگا۔

دبئی ساؤتھ درحقیقت ایک نیا شہر ہوگا جو دبئی کے جنوب میں 145 کلومیٹر رقبے پر پھیلا ہوا ہوگا۔

مزید خبریں :