پاکستان
04 دسمبر ، 2021

ملکی تاریخ میں پہلی بار منی لانڈرنگ اور ٹیکس چوری میں سزا

ملکی تاریخ میں پہلی بار منی لانڈرنگ اور ٹیکس چوری  میں سزا

فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) نے تاریخ میں پہلی بار منی لانڈرنگ کیس میں مقدمہ جیت کر تاریخ رقم کر دی۔

ملکی تاریخ میں پہلی بار منی لانڈرنگ اور ٹیکس چوری کا الزام ثابت ہونے پر قید اور جرمانے کی سزا ہوئی جب کہ مجرم کی جائیداد بھی قرق کرنے کا حکم دیا گیا۔

ایف بی آر کے مطابق ڈائریکٹوریٹ جنرل آئی اینڈ آئی آر کو مالک رائے ٹریڈنگ کمپنی باجوڑ خیبر پختونخوا حبیب اللہ سے متعلق مالیاتی معلومات کا علم ہوا جس سے پتا چلا کہ ملزم کے کیش اور بینک ٹرانزیکشن اس کی کاروباری پروفائل سے مطابقت نہیں رکھتے۔

ڈائریکٹوریٹ نے ٹیکس قوانین کے تحت ابتدائی تحقیقات کیں جس دوران ملزم کے 6 مزید بینک اکاؤنٹس کا پتا چلا جس کے ذریعے بڑی ٹرانزیکشنز کی گئی تھیں، ملزم کے تمام بینک اکاؤنٹس کی کل رقم 2090 ملین روپے تھی جب کہ اس نے 2015 میں صرف ایک لاکھ 92 ہزار 877 روپے ٹیکس ادا کیا تھا، ملزم نے آمدن اور بینک اکاؤنٹس کو چھپایا اور ٹیکس اتھارٹیز کو غلط معلومات فراہم کیں۔

بعدازاں تفصیلی جانچ پڑتال کے بعد منی لانڈرنگ کا علم ہوا جس کے بعد اینٹی منی لانڈرنگ ایکٹ 2010 کے تحت کارروائی کا آغا ز کر دیا گیا۔

کورٹ کی اجازت کے بعد بینک اکاؤنٹس کو اینٹی منی لانڈرنگ ایکٹ 2010 کی شق 8 کے تحت ضبط کر لیا گیا۔

 ایکٹ کی شق 9 کے تحت تفتیش مکمل ہونے پر حتمی چالان پیش کیا گیا اور انکم ٹیکس آرڈیننس 2001 کی شق 203 کے تحت منی لانڈرنگ اور ٹیکس چوری کا مقدمہ درج کر دیا گیا۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM