کھیل
21 ستمبر ، 2022

ویمن کرکٹرز کو متحرک رکھنے اوران کی حوصلہ افزائی کی ضرورت ہے: ٹیم منیجر

ہار کے بعد ویمن کھلاڑی بھی مایوس ہوتی ہیں ، انہیں بھی افسوس ہوتا ہے لیکن انہیں اس ہار سے اٹھنا بھی ہوتا ہے : عائشہ اشعر/فوٹوجیو نیوز
 ہار کے بعد ویمن کھلاڑی بھی مایوس ہوتی ہیں ، انہیں بھی افسوس ہوتا ہے لیکن انہیں اس ہار سے اٹھنا بھی ہوتا ہے : عائشہ اشعر/فوٹوجیو نیوز

پاکستان ویمن کرکٹ ٹیم کی منیجر عائشہ اشعر نے قوم سے ویمن کرکٹرز کی حوصلہ افزائی  کرنے کی درخواست کی ہے۔

کنٹری کلب مرید کے میں ویمن کرکٹ ٹیم کے کیمپ کے موقع پر جیو نیوز سے گفتگو کرتے ہو ئے منیجر  پاکستان ویمن کرکٹ ٹیم عائشہ اشعر نے کہا کہ  مانا  کہ کامن ویلتھ گیمز میں ویمن ٹیم نے اچھے کھیل کا مظاہرہ نہیں کیا لیکن ایک ٹورنامنٹ برا جانے کے بعد کھلاڑیوں کی حوصلہ شکنی نہیں کرنی چاہیے۔

 انھوں نے کہا کہ ہار کے بعد ویمن کھلاڑی بھی مایوس ہوتی ہیں، انہیں بھی افسوس ہوتا ہے لیکن انہیں اس ہار سے اٹھنا بھی ہوتا ہے اور اگلے روز  پھر کھیلنا ہوتا ہے، وہ مایوسی کے باوجود کھیلتی ہیں اور سیکھتی ہیں کہ ان سے کہاں غلطی ہو ئی۔

منیجر عائشہ اشعر کے مطابق  ویمن کرکٹرز کو متحرک رکھنے کی ضرورت رہتی ہے، انہیں سپورٹ اور حوصلہ افزائی کی ضرورت ہوتی ہے، ان کا اتنا ایکسپوژر نہیں ہوتا کہ یہ بس ہمیشہ ہی اچھا کھیلتی رہیں گی، اچھا برا ٹورنامنٹ جاتا ہے لیکن اس کا مطلب یہ نہیں ہے کہ ہمین ویمن کرکٹرز کو سپورٹ ہی نہیں کرنا۔

انہوں نے کہا کہ ٹیم میں زیادہ تر  جوان کھلاڑی شامل ہیں، کامن ویلتھ گیمز اچھی نہیں گئی لیکن ایشیا کپ میں ویمن کرکٹرز اچھا کر سکتی ہیں اور اسی کے لیے محنت کی جا رہی ہے، ایشیا کپ کے بعد آئر لینڈ کی ویمن ٹیم پاکستان آ رہی ہے، پھر پاکستان ویمن ٹیم نے آسٹریلیا کا دورہ کرنا ہے اور  پھر ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ ہے، سارا فوکس اس وقت ورلڈ کپ کے لیے تیاری پر ہے، بڑی امید ہے کہ پہلے سے بہتر نتائج آئیں گے۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM