کاروبار
22 ستمبر ، 2022

برطانیہ میں کساد بازاری : شرح سود مزید اضافے کے بعد 14 سال کی بلند ترین سطح پر

بینک آف انگلینڈ کی عمارت / اے پی فوٹو
بینک آف انگلینڈ کی عمارت / اے پی فوٹو

برطانیہ میں مہنگائی اور کساد بازاری کی روک تھام کے لیے شرح سود میں مسلسل 7 ویں بار اضافہ کردیا گیا ہے۔

بینک آف انگلینڈ کی جانب سے شرح سود میں 50 بیسز پوائنٹس کا اضافہ کیا گیا جس کے بعد وہ 2.25 فیصد ہوگیا ہے۔

یہ 14 سال میں سب سے بلند شرح سود ہے جبکہ بینک آف انگلینڈ نے کہا کہ برطانیہ ممکنہ طور پر کساد بازاری کا شکار ہوچکا ہے۔

برطانیہ میں مہنگائی کی شرح بھی 40 فیصد کی بلند ترین سطح پر پہنچ چکی ہے۔

2022 کے دوران بینک آف انگلینڈ کی جانب سے شرح سود میں 2 فیصد کا اضافہ کیا جاچکا ہے جس میں آنے والے مہینوں میں مزید اضافے کا امکان ہے۔

بینک آف انگلینڈ کی مانیٹری پالیسی کمیٹی نے کہا کہ برطانوی معیشت پہلے ہی کساد بازاری کا شکار ہوچکی ہے اور اگلی 2 سہ ماہیوں کے دوران اس کے حجم میں کمی آسکتی ہے۔

بینک آف انگلینڈ نے تخمینہ لگایا ہے کہ برطانیہ میں اکتوبر 2022 میں مہنگائی کی شرح 11 فیصد تک پہنچ سکتی ہے جبکہ بینک نے پہلے 13.3 فیصد کی پیشگوئی کی تھی۔

مزید خبریں :

Notification Management


پاکستان
دنیا
کاروبار
کھیل
انٹرٹینمنٹ
صحت و سائنس
دلچسپ و عجیب

ڈیسک ٹاپ نوٹیفکیشن کے لیے سبسکرائب کریں
Powered by IMM