-----

ویسٹ انڈیز کا پاکستان کو فتح کیلئے 234رنز کا ہدف

West Indies Ka Pakistan Ko Fatah K Lye 234 Runs Ka Hadaf

تیسرے اور فیصلہ کن میچ میں ویسٹ انڈیز نے پاکستان کومیچ جیتنے کے لئے 234رنز کا ہدف دیاہے،ویسٹ انڈیز کی جانب سے شائی ہوپ نے سب سے زیادہ 71رنز جبکہ جیسن محمد نے ایک مرتبہ پھر عمدہ بیٹنگ کی اور59رنز بنائے۔

جارج ٹائون گیانا میں کھیلےجانے والے میچ کا ٹاس ویسٹ انڈیز کے کپتان جیسن ہولڈرنے جیتا اور پہلے خود بیٹنگ کا فیصلہ کیا ،پاکستانی بولرجنید خان نے پہلی کامیابی اس وقت دلوائی جس ویسٹ انڈیز کا مجموعہ31رنز تھاآئوٹ ہو نے والے کھلاڑی ایون لوئس تھے انہوں نے16رنز بنائے۔

میزبا ن ٹیم کےدوسرے آئوٹ ہونے والے کھلاڑیوالٹن تھے جو19بنا سکے ،انہیں حسن علی نے کلین بولڈ کیا،اس وقت ویسٹ انڈیز کا مجموعہ40رنز تھا۔کیرن پائول بھی زیادہ جم کر بیٹنگ نہ کرسکے اور23کے اسکور پر کپتان کے ہاتھوں اسٹمپ ہو گئےبولر عماد وسیم تھے۔

اس کے بعد آنے والے بیٹسمین شائی ہوپ نے سب سے زیادہ 71رنز جبکہ جیسن محمد نے ایک مرتبہ پھر عمدہ بیٹنگ کی اور59رنز بنائے،دونوں کی رفاقت میں101رنز بنے،دونوں کی اسکور میں دو، دو چھکے شامل تھے خاص طور پر جیسن محمد نے جارحانہ اننگز کھیلی ان کی اننگ میں5چوکے بھی شامل تھے۔

ان دونوں بیٹسمینوں کے علاوہ دیگر کوئی بیٹسمین بڑا اسکور کرنے میں ناکام رہا،نرس10،جیسن ہولڈر12،جوناتھن کارٹر11اورپرموئل8رنز بنا سکے،یوں ویسٹ انڈیز نےمقررہ50اوورز میں9وکٹ کے نقصان پر233رنز کا مجموعہ ترتیب دیا اور پاکستان کو میچ میں فتح کے لئے234رنز کا ہدف دیا۔

پاکستان کی جانب سے محمد عامر،شاداب خان اور جنید خان نے2،2جبکہ عماد وسیم اورحسن علی نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔محمد حفیظ نے بھی آج بولنگ کرائی اور7اوورز میں 21رنز دیئے تاہم وہ کوئی وکٹ حاصل نہ کر سکے۔

تین میچز کی سیریز ایک ایک میچ سے برابر ہے تیسرے میچ کی فاتح ٹیم2019کے ورلڈ کپ میں براہ راست شرکت کی اہل بن جائے گی جبکہ شکست کی صورت میں کوالیفائنگ رائونڈ کھیلنے پر مجبور ہو گی۔

جارج ٹائون گیانا میں کھیلاجانے والا میچ 2019 میں ہونے والے کرکٹ ورلڈ کپ تک براہ راست رسائی حاصل کرنے کے لیےدونوں ٹیموں کے لیے انتہائی اہمیت کی حامل ہے۔

پاکستان نے آخری ون ڈے کے لیے دوسرے میچ کی فاتح ٹیم کو برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا ہےجبکہ ویسٹ انڈیز کی ٹیم میں ایک تبدیلی کی گئی ہے۔

کپتان سرفراز احمد کے مطابق کوشش کریں گے کہ ویسٹ انڈیز کو جلد آؤٹ کرسکیں ،پہلے میچ میں شکست کے بعد کھلاڑیوں نے اچھا کم بیک کیا ہے۔

تین میچوں کی سیریز ایک ایک سے برابر ہے۔ ویسٹ انڈیز نے جیسن محمد کے91رنز کی بدولت پہلا میچ چار وکٹ سے جیتا تھا ۔ پاکستان نے بابر اعظم کی پانچویں سنچری اور حسن علی کی پانچ وکٹوں کی بدولت دوسرے ون ڈے میں 74رنز سے کامیابی حاصل کی تھی۔

انٹرنیشنل کرکٹ کونسل کی جانب سے جاری ہونے والے بیان کے مطابق سابق عالمی چیمپیئن ویسٹ انڈیز اس وقت عالمی رینکنگ میں نویں اور پاکستان آٹھویں پوزیشن پر موجود ہیں۔

پاکستان کو 2019 کے عالمی کپ میں اپنی براہ راست رسائی کو یقینی بنانے کے لیے اس سیریز کے تینوں میچ جیتنا لازمی تھے جو کہ اب پہلے میچ میں شکست کے بعد ممکن نہیں رہا۔ تاہم سیریز جیتنے کی صورت میں اس کی آٹھویں پوزیشن برقرار رہ سکتی ہے۔

2019میں ہونے والے ورلڈ کپ میں عالمی رینکنگ کی ابتدائی آٹھ ٹیموں کو براہ راست رسائی حاصل ہوگی جبکہ دیگر ٹیموں کو کوالیفائنگ راؤنڈ کھیلنا ہوگا جن میں سے دو ہی ٹیمیں آگے جا سکیں گی۔


کیچ نیا لیکن عادت پرانی،کامران اکمل نے ایک بار پھر آسان ساکیچ ڈراپ کردیا
کامران اکمل وکٹ کیپر سے فیلڈر بن گئے لیکن کیچ چھوڑنے کی عادت اب بھی برقرار